لبنانی وزیر اعظم کو اجنبی عورت سے مصافحہ اور بوسہ دینے پر شرمناک صورت حال کا سامنا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

لبنان کے وزیر اعظم نجیب میقاتی کو طیارے کی سیڑھیوں پر اس وقت شرمناک صورتحال کا سامنا کرنا پڑا جب وہ بیروت ایئرپورٹ پر اطالوی وزیر اعظم جارجیا میلونی کا انتظار کر رہے تھے۔

"وفد کے رکن"

میقاتی نے ایک خاتون سے مصافحہ کیا اور اسے بوسہ دیا۔ انہوں نے سمجھا کہ وہ میلونی ہیں لیکن معلوم ہوا کہ وہ اطالوی وزیراعظم کے ساتھ آنے والے وفد کی رکن تھیں۔

علاوہ ازیں میقاتی نے بیروت ایئرپورٹ پر اٹلی کے وزیراعظم کا استقبال کیا۔ دورے کے آغاز میں انہوں نے جنوبی لبنان میں امن فوج کے طور پر کام کرنے والی اطالوی بٹالین کا معائنہ کیا۔

اطالوی وزیر اعظم رفیق حریری بین الاقوامی ہوائی اڈے پر پہنچے اور وزیر اعظم نجیب میقاتی نے وی آئی پی ہال میں ان کا استقبال کیا۔ اس سے پہلے کہ وہ سیریل چلے گئے، جہاں اطالوی وزیر اعظم نے سرکاری استقبالیہ تقریب منعقد کی۔

غزہ میں جنگ بندی کی قرارداد

دونوں وزرائے اعظم نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرارداد نمبر 2728 میں رمضان المبارک کے دوران غزہ میں جنگ بندی کی شرط پر اطمینان کا اظہار کیا۔ انہوں نے اس پر عمل درآمد اور پائیدار جنگ بندی کا مطالبہ کیا۔

بات چیت میں خطے اور لبنان سے متعلق سلامتی کونسل کی قراردادوں پربھی بات ہوئی جہاں لبنانی وزیراعظم نے تمام بین الاقوامی قراردادوں، خاص طور پر قرارداد 1701 پر مکمل عملدرآمد کے لیے لبنان کے عزم کا اعادہ کیا۔

انہوں نے لبنان میں بے گھر ہونے والے شامیوں اور بحیرہ روم کے علاقے میں غیر قانونی تارکین وطن کے معاملے پر بھی تبادلہ خیال کیا.

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں