بزرگ کویتی نے سونے کی اینٹ جیت لی مگر آرگنائزنگ کمپنی نے اسے دینے سے انکار کردیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایک معمر کویتی شہری اس وقت توجہ کا مرکز بن گیا جب وہ عالمی شہرت یافتہ گیم میں ایک شیشے کے ڈبے کے اندر سے سونے کی بھاری بار نکالنے میں کامیاب ہو گیا۔ مگر وہ اس وقت حیران رہ گیا جب مقابلے کے منتظمین نےاسے کہا کہ وہ اس کا اہل نہیں۔

ایک ویڈیو کلپ میں دکھایا گیا ہے کہ ایک بزرگ آدمی کویتی عربی لہجے میں بات کرتا ہے اوراس کے ساتھ کئی خواتین بھی ہیں۔ اس بلین کو کمال، سکون اور حوصلہ کے ساتھ باکس سے باہر نکالنے کی کوشش کر رہا ہے۔ یہ اس پہلی کوشش نہیں بلکہ وہ اس سے قبل اس طرح کی کئی کوششیں کرچکا تھا جن میں وہ ناکام رہا تھا۔

لیکن اس شخص کو اس گیم سے باہر کردیا گیا۔ کویت کی ایک گولڈ کمپنی سے منسلک گیم کے منتظمین نے مقابلہ صرف خواتین کے لیے مختص کیا۔ کمپنی کے اس اقدام پر سوشل میڈیا پر سخت تنقید کی جا رہی ہے۔

یہ معلوم نہیں ہے کہ آیا یہ مرکب خالص سونا ہے۔ کچھ بلاگرز نے کہا ہے کہ یہ ایک عام دہات ہے جس پر سونے کی قلعی کی گئی ہے۔ اس کا مقصد توجہ مبذول کرنا ہے۔ اگر یہ خالص سونا ہے تو کمپنی کے لیے اس مقدارکا تحفہ مختص کرنا ممکن نہیں ہے۔

یہ مقابلہ سونے اور زیورات کی نمائش کے لیے منعقد کیا گیا تھا جو کل سوموار کو چھ روزہ سرگرمیوں پر اختتام پذیر ہوئی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں