سعودی تیل کمپنی ' آرامکو' کے حصص کی فروخت شروع ، 12 ارب ڈالر ملنے کا امکان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی تیل کمپنی ' آرامکو' ' نے اپنے حصص کی محدود تعداد کی فروخت شروع کر دی ہے۔ اتوار کے روز 12 ارب ڈالر پانے کے لیے کمپنی نے حصص فروخت کرنے کے اس سلسلے کا آغاز کیا ہے۔ یہ کمپنی سعودی عرب کی ان بڑی کمپنیوں میں سے ایک ہے جس میں سرمایہ کاری کی کوشش لوگوں کی رہتی ہے۔ تاہم اس نئے آغاز سے مملکت کے غیر ملکی سرمایہ کاری کھینچنے کے منصوبوں کے سلسلے میں بھی ایک فوری نتیجہ سامنے آ سکے گا۔

واضح رہے 5 سال پہلے سے آرامکو کے حصص مارکیٹ میں لانے کی کوششش جاری ہے۔ تاکہ غیر ملکی سرمایہ کار متوجہ ہو سکیں۔ موسمایاتی تبدیلیوں اور حکومتی کنٹرول کی وجہ سے تیل کی طلب پر اثر انداز ہو رہا ہے۔ جس کے آنے والے برسوں میں خطرات پیدا ہو سکتے ہیں۔

اس پس منظر میں ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے اپنے معاشی ویژن کے ساتھ چیزوں کو نئے تناظر میں دیکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔ تاکہ مستقبل مین مملکتی معیشت کا انحصار صرف تیل کی پیداوار پر نہ رہے۔ بلکہ ایک متنوع اور متوازن معیشت سعودی پہچان بن جائے۔

اتوار کے روز بتایا گیا ہے کہ ' آرامکو ' کے حصص صبح دو اعشاریہ چوبیس فیصد تک گر کر آٹھائی اعشاریہ پچیس فیصد تک آگئے ہیں۔ یہ ایک سال کی کم ترین سطح تھی۔ سعودی حکومت 64۔0 فیصد حصص 29 ریال تک کی قیمت تک فروخت کر رہی ہے۔ اتوار کے روز اس سلسلے میں آرڈر لینا شروع کیے ہیں مگر حصص کی حتمی قیمتوں کا فیصلہ جمعہ کے روز کیا جائے گا۔

آرامکو کے سربراہ امین ناصر نے ایک حالیہ پریس کانفرنس میں کہا تھا ' یہ کوشش سعدی اور بین الاقوامی سرمایہ کاروں تک اپنی بنیاد وسیع کرنے کا موقع دے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں