.

پاکستان اٹامک انرجی کی منی بس پر خودکش حملہ ، دو افراد جاں بحق ، 14 زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان کے اہم حساس ادارے اٹامک انرجی کمیشن (پی اے ای سی) کی ایک منی بس پر صوبہ پنجاب کے ضلع اٹک میں خودکش حملے اور فائرنگ کے نتیجے میں دو افراد جاں بحق اور چودہ زخمی ہوگئے ہیں ۔

پولیس حکام کے مطابق پی اے ای سی کی منی بس پر جمعرات کی شام اٹک، بسال روڈ پر یہ حملہ کیا گیا ہے۔ ضلع کے ایمرجنسی افسر ڈاکٹر اشفاق نے بتایا ہے کہ ایک اسپیڈ بریکر پر جب بس کی رفتار کم ہوئی تو حملہ آور نے اچانک اس پر فائرنگ شروع کردی۔اس دوران میں بس کا ڈرائیور دلیری کا مظاہرہ کرتے ہوئے نیچے اتر آیا اور اس نے حملہ آور کو پکڑنے کی کوشش کی لیکن اس نے خود کو دھماکے سے اڑا دیا جس سے ڈرائیور اور ایک راہ گیر طالب علم موقع پر ہی جاں بحق ہوگئے ۔

مقتول ڈرائیور کمیشن ہی کا ملازم تھا اور اس نے اپنی جان دے کر اپنے ساتھیوں کی زندگیوں کو بچا لیا ہے۔دھماکے سے منی بس کے اگلے حصے کو شدید نقصان پہنچا ہے۔ پولیس حکام کا کہنا ہے کہ حملہ آور نے بارود سے بھری جیکٹ پہن رکھی تھی اور وہ خود بھی دھماکے میں موقع پر ہی مارا گیا ہے۔

تمام زخمیوں کو اٹک کے ضلعی ہیڈ کوارٹر اسپتال میں منتقل کردیا گیا ہے۔ان میں ایک بچے سمیت تین کی حالت تشویش ناک بتائی جاتی ہے۔ دو زخمیوں کو راول پنڈی منتقل کردیا گیا ہے۔

سکیورٹی فورسز اور انٹیلی جنس ایجنسیوں کے اہلکاروں نے اس واقعے کے فوری بعد علاقے کا محاصرہ کر لیا اور امدای سرگرمیوں شروع کردیں۔

دریں اثناء ڈان نیوز کی رپورٹ کے مطابق انسپکٹر جنرل (آئی جی) پولیس پنجاب نے ضلع اٹک میں اس خودکش حملے کے بعد صوبے بھر میں حساس تنصیبات ، تعلیمی اداروں ، عبادت گاہوں اور مارکیٹوں میں سکیورٹی سخت کرنے کا حکم دیا ہے۔