امارات نے آئی ایم ایف کو پاکستان کیلئے ایک ارب ڈالر کی مالی معاونت کی تصدیق کر دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

پاکستان کے وفاقی وزیر خزانہ و محصولات سینیٹر محمد اسحاق ڈار کے مطابق متحدہ عرب امارات کے حکام نے آئی ایم ایف کو پاکستان کے لیے ایک ارب ڈالر کی دو طرفہ مالی معاونت کی تصدیق کر دی ہے۔

جمعہ کے روز سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر وزیر خزانہ نے بتایا کہ سٹیٹ بینک آف پاکستان یو اے ای سے مذکورہ ڈیپازٹس کے حصول کیلئے ضروری دستاویزات کی تیاری میں مصروف ہے۔

متحدہ عرب امارات نے ایک ارب ڈالر مالی امداد کی تصدیق کر دی جبکہ یو اے ای حکام نے آئی ایم ایف کو بھی آگاہ کر دیا ہے۔

واضح رہے کہ عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) نے پاکستان کے ساتھ جلد اسٹاف لیول معاہدے کی یقین دہانی کروا دی ہے۔

پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان گزشتہ روز ایک اور اہم ورچوئل اجلاس ہوا، جس میں پاکستان کی قیادت وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے کی جبکہ وزارت خزانہ، اقتصادی امور کے سیکریٹریز اور گورنر اسٹیٹ بینک واشنگٹن سے اجلاس میں شریک ہوئے۔

اجلاس کے دوران وزیر خزانہ اسحاق ڈار اور ڈپٹی ایم ڈی آئی ایم ایف اینٹونیٹ منیسہ نے پاکستان کی معاشی صورتحال اور اصلاحات پر تبادلہ خیال کیا اور پاکستان کی جانب سے آئی ایم ایف پروگرام کے پیشگی اہداف پر عمل درآمد کا جائزہ لیا۔

واضح رہے کہ اس سے قبل سعودی عرب کی جانب سے پاکستان کیلئے 2 ارب ڈالر کی مالی معاونت کی تصدیق ہو چکی ہے۔

چین سے 30 کروڑ ڈالر قرض

دریں اثنا وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے اس امر کی تصدیق کی ہے کہ پاکستان کو چین کی طرف سے 30 کروڑ ڈالر موصول آج ہو جائیں گے۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری بیان میں وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے کہا کہ آج آنے والی رقم چین کی طرف سے منظورکردہ ایک ارب 30 ڈالر قرض کا حصہ ہے۔

اسحاق ڈار نے کہا کہ چین قرض کی مد میں ایک ارب ڈالر پاکستان کو پہلے ہی ادا کرچکا ہے، یہ رقم چین کے آئی سی بی سی بینک کی طرف سے 1.3 ارب قرض کی تیسری قسط ہے، یہ فنڈز پاکستان کے زرمبادلہ ذخائر کو بڑھائیں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں