پاکستان حج مشن صحت کی کسی بھی ہنگامی صورتِ حال سے نمٹنے کے لیے پوری طرح تیار

400 رکنی پاکستان حج میڈیکل مشن 24 گھنٹے حجاج کی خدمت کے لیے مصروفِ عمل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

پاکستان حج مشن کے ڈائریکٹر کے مطابق حج کے دوران صحت کی کسی بھی ہنگامی صورتِ حال سے نمٹنے کے لیے پوری طرح تیار ہیں۔

سرکاری نشریاتی ادارے ریڈیو پاکستان کے مطابق پاکستان حج مشن کے ڈائریکٹر جمیل احمد لکھیار نے کہا، 400 رکنی پاکستان حج میڈیکل مشن سعودی عرب میں پاکستانی عازمین کی خدمت کے لیے چوبیس گھنٹے کام کر رہا ہے۔

رپورٹ میں عہدیدار کے حوالے سے بتایا گیا، "اگر کوئی بھی طبی ہنگامی صورتِ حال پیدا ہوتی ہے تو میڈیکل مشن انتہائی پیشہ ورانہ انداز میں پوری طرح سے مزین، تیار اور اس سے نمٹنے کے قابل ہے۔"

نیز انہوں نے کہا، "میڈیکل مشن میں تقریباً تمام قسم کے طبی ماہرین بشمول امراضِ قلب، امراضِ سینہ، طبیعیات، تنفس، امراضیات، تابکاری اور امراضِ جلد کے ماہرین شامل ہیں۔ وہ حجاج کی خدمت کے لیے چوبیس گھنٹے دستیاب ہیں۔

اوسطاً تقریباً 1,300مریض میڈیکل مشن کی صحت کی سہولیات سے استفادہ حاصل کر رہے ہیں جہاں انہیں مفت علاج اور ادویات فراہم کی جاتی ہیں۔

لاہور سے تعلق رکھنے والے ایک پاکستانی حاجی عمران احمد نے بتایا کہ، "سعودی عرب میں دستیاب سہولیات بہت اچھی ہیں اور حاجیوں کو ایسا محسوس نہیں ہوتا کہ وہ کسی دوسرے ملک میں آئے ہیں۔"

سعودی محکمہ موسمیات کی جانب سے جاری کردہ شدید گرمی کے انتباہ کے بعد پاکستانی حج مشن کے ڈائریکٹر نے حجاجِ کرام سے اپیل کی کہ وہ شدید گرمی کے خلاف تمام ممکنہ احتیاطی تدابیر اختیار کریں۔

انہوں نے عازمینِ حج کو مشورہ دیا کہ وہ چہرے کے ماسک اور چھتریوں کا استعمال کریں، دھوپ میں جانے سے گریز کریں اور اپنی صحت برقرار رکھنے کے لیے زیادہ پانی اور ترجیحاً او آر ایس پئیں۔

پاکستانی سادہ لباس اور وردی والے افسران سمیت تقریباً 390 معاونین حجاج کرام کو سفر اور رہائش کی سہولیات کے ساتھ ساتھ کھانا فراہم کرنے کے لیے کام کر رہے ہیں جبکہ وزارت کے 150 سے زائد افسران مین کنٹرول آفس، مدینہ اور جدہ کے ہوائی اڈے، محکمۂ گمشدگی و بازیابی، مدینہ روانگی سیل، مانیٹرنگ سیل اور شعبۂ حسابات و انتظامات میں حجاج کو سہولیات فراہم کر رہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں