کیا آپ ان لوگوں میں سے ہیں جو کھانا جلدی کھاتے ہیں؟ پڑھیں آپ کے جسم کے ساتھ کیا ہوتا

اچھی صحت برقرار رکھنے اور اس سے لطف اندوز ہونے کا تعلق صرف اس بات سے نہیں ہے کہ کیا کھایا جاتا ہے، بلکہ اس سے بھی ہے کہ اسے کتنی جلدی کھایا جاتا ہے: اسٹڈی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

انسانوں کی بہت سی فطرتیں ہیں اور کھانے کی عادات بھی مختلف ہیں۔ بعض ایسے ہیں جو اپنا سارا وقت کھانا کھاتے ہیں خواہ وہ اکیلے ہوں یا دوسرے لوگوں کے ساتھ۔ جبکہ بعض دوسرے جلدی جلدی کھانا کھانے کی کوشش کرتے ہیں۔

بہت سے لوگ اس عادت کی سنگینی اور وقت کے ساتھ ساتھ اس کے جسم پر کیا اثرات مرتب ہوتے ہیں سمجھے بغیر، وقت کی کمی کے باعث یا کسی کام ، مطالعہ ، اور دیگر مصروفیت کے دوران کھانا کھاتے وقت جلدی کرتے ہیں۔

تاہم، ایک جدید تحقیق میں انکشاف ہوا ہے کہ توانائی کی فراہمی اور صحت کو برقرار رکھنے کے لیے صرف کھانا ہی کافی نہیں ہے بلکہ اسے کھانے کا طریقہ بھی کافی اہم ہے۔ مناسب طریقے سے نہ کھانا صحت کے لیے نقصان دہ ہو سکتا ہے۔

جرمن "فوکس" میگزین کی رپورٹ کے مطابق، یہ جاننے کے لیے کہ کھانے کے طریقے سے انسان پر کیا اثر پڑتا ہے، جاپانی یونیورسٹی آف ہیروشیما کی جانب سے کی گئی ایک تحقیق میں ماہرین نے شرکاء کے ایک گروپ کو تین گروہوں میں تقسیم کیا۔ ایک گروہ جلدی سے کھانا کھاتا ہے، ایک سست طریقے سے، اور آخری معمول کے مطابق۔

تحقیق کے مطابق ابتدائی طور پر کسی بھی گروپ میں بیماری یا کمزوری کی علامات ظاہر نہیں ہوئیں لیکن پانچ سال بعد ماہرین نے نوٹ کیا کہ جو لوگ جلدی جلدی کھانا کھاتے ہیں ان میں ہائی بلڈ پریشر، زیادہ وزن، انسولین کے خلاف مزاحمت اور لپڈ ڈس آرڈر ہونے کا امکان 89 فیصد زیادہ تھا۔

تحقیق میں بتایا گیا کہ جو لوگ جلدی کھانا کھاتے ہیں وہ وزن میں اضافے کا شکار ہوتے ہیں، کیونکہ جلدی کھانے سے پیٹ بھرنے کا احساس نہیں کرتا اور ضرورت سے زیادہ کھانا کھایا جاتا ہے۔

تحقیق میں بتایا گیا کہ اچھی صحت کو برقرار رکھنے اور اس سے لطف اندوز ہونے کا تعلق صرف اس بات سے نہیں ہے کہ کیا کھایا جاتا ہے، بلکہ اس بات سے بھی ہے کہ اسے کتنی جلدی کھایا جاتا ہے۔

مطالعہ کے رہنما ڈاکٹر تاکایوکی یاماجی نے کہا، "جب لوگ جلدی کھاتے ہیں، تو وہ عام طور پر پیٹ بھرنے کا احساس نہیں کرتے، اور ان کے زیادہ کھانے کا امکان ہوتا ہے۔"
"جلدی کھانے سے گلوکوز کی سطح میں زیادہ اتار چڑھاؤ آتا ہے، جو انسولین کے خلاف مزاحمت کا باعث بن سکتا ہے۔"

"آہستہ آہستہ کھانا میٹابولک سنڈروم کو روکنے میں مدد کے لیے طرز زندگی میں ایک اہم تبدیلی ہو سکتا ہے،" انہوں نے مزید کہا۔

اس کے علاوہ کھانے کی بہتر عادات میں کھانے میں باقاعدگی کی ہدایت کی جاتی ہے۔ اپنے آپ کو کھانے پر توجہ دینے کی تربیت دیں، اس کے لیے آپ کھانے کے دوران ٹی وی بند کرنے اور موبائل فون سے دور رہنے کے علاوہ "کم از کم 20 منٹ" کھانے کے لیے مختص کر سکتے ہیں۔ کھانے کو ہمیشہ چھوٹے چھوٹے لقمے لے کر اچھی طرح چبا کر کھانا چاہیے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں