سعودی عرب میں گرمی کو شکست دیں اور پُرفضا سرد مقامات کی سیرکریں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
6 منٹس read

سعودی عرب میں خوب صورت پہاڑی سلسلوں سے لے کر ساحلی علاقوں تک، حیرت انگیز طور پر ٹھنڈے پُرفضا مقامات موجود ہیں جو موسم گرما میں تپش زدہ ماحول میں تازگی ،فرحت اور ناقابل فراموش تعطیلات گزارنے کے مواقع مہیا کرتے ہیں۔

غیر یقینی عالمی موسمی حالات کی وجہ سے موسم گرما کے منصوبوں میں خلل پڑنے کے خدشات کے پیش نظر سعودی عرب ملکی اور بین الاقوامی مسافروں کو ٹھنڈے مقامات کی سیر کی دعوت دیتا ہے۔

لگژری مقامات کی مینجمنٹ کمپنی روم کے منیجنگ ڈائریکٹر اسٹورٹ مکنیر نے سعودی عرب کو "جواہرات" اور "تعطیلات کے لیے ایک مثالی مقام" قرار دیا ہے۔

العربیہ سے گفتگو میں مکنیر نے کہا کہ ’’ہم جانتے ہیں کہ سعودی عرب ایک ہیرا ہے، جو منفرد اور مستند تجربات اور ماحول پیش کرتا ہے۔ یہ ایک شہر سے دوسرے شہر میں مختلف ہوتا ہے، جس کی وجہ سے یہ سال بھر تعطیلات کے لیے مثالی مقام بن جاتا ہے‘‘۔انھوں نے سعودی سیاحوں کی بھی حوصلہ افزائی کی ہے کہ وہ اس موسم گرما میں مملکت میں پُرفضا مقامات کی سیرکریں۔

ان کا کہنا تھا کہ ’’یہاں بہت زیادہ خوب صورتی ہے جسے تلاش نہیں کیا جا سکتا۔چاہے مسافر جدہ کے البلد کے ذریعے تاریخی مہم جوئی پر جانے کا انتخاب کریں یا بحیرہ احمر میں ایک کشتی پر سمندری حیات کی 300 سے زیادہ اقسام کو دریافت کریں ، ملک میں ہر ایک کی سفری ضروریات کے لیے مختلف قسم کی مہم جوئی کا ساماں موجود ہے‘‘۔

Nabataean tombs complex

مدائن الصالح کے تاریخی آثار۔
مدائن الصالح کے تاریخی آثار۔

سیاحت کا فروغ

مئی میں ٹریول ڈیٹا فرم فارورڈ کیز نے اطلاع دی تھی کہ سعودی عرب میں گذشتہ سال کے مقابلے میں اس سال جون اور اگست کے درمیان سیاحت میں زبردست اضافہ دیکھنے میں آئے گا، خاص طور پر اس بات کو دیکھتے ہوئے کہ ملک نے گذشتہ چند سال میں اس شعبے میں کتنی سرمایہ کاری کی ہے۔

مملکت شعبہ سیاحت میں بھاری سرمایہ کاری کر رہی ہے۔ملک کے اندر اور بیرون ملک سے مسافروں کو علاقائی اور بین الاقوامی مارکیٹوں کو راغب کرنے کے لیے دیگر چیزوں کے ساتھ ساتھ مہم جوئی کی سرگرمیوں کے مواقع مہیا کیے جارہے ہیں۔

سعودی ٹورازم اتھارٹی (ایس ٹی اے) کے چیف ایگزیکٹو آفیسر فہد حمید الدین نے رواں سال کے اوائل میں عرب ٹریول مارکیٹ کو بتایا تھا کہ سیاحت مملکت کے لیے ’’نیا تیل‘‘ ثابت ہوگی۔

انھوں نے کہا کہ ایک صدی قبل 1920ء کی دہائی میں دنیا تیل کے لیے سعودی عرب آئی تھی۔ اب، 2020 کی دہائی میں، دنیا سیاحت کے لیے آئے گی اور یہ نیا تیل ہے۔

یہاں سعودی عرب کے موسم گرما کے بہترین مقامات کے لیے ایک رہ نما گائیڈ ہے:

جدہ ، البلد

البلد جدہ شہر کا تاریخی مرکز ہے اور اس کی تاریخ ایک ہزار سال سے بھی زیادہ قدیم ہے۔یہ یونیسکو کے ثقافتی ورثے میں شامل ہے۔مسافرشہر کے اس قدیم ترین حصے میں تاریخی مہم جوئی پر جا سکتے ہیں اور یہ دریافت کرسکتے ہیں کہ جدید شہر کے ارتقاء سے پہلے زندگی کیسی تھی۔

یونیسکو کا یہ ثقافتی ورثہ ساتویں صدی عیسوی کے اوائل میں قائم کیا گیا تھا اور 1970 کی دہائی میں تیل کے عروج سے پہلے جدہ کے تجارتی مرکز کے طور پر مشہور تھا۔

قدیم شہر ایک قدیم تجارتی بندرگاہ اور حج اور عمرہ کے لیے مکہ کا بنیادی گیٹ وے تھا۔آج ، یہ شہر اپنے قدیم فن تعمیر اور روایتی عمارتوں کے لیے مشہور ہے۔ یہ مرجان کے پتھرسے تعمیر کیا گیا تھا اور لکڑی کی خوب صورت جالی دار کھڑکیوں سے سجایا گیا تھا۔

ماہرین سیاحت نے 'سعودی عرب میں موسم گرما' پیکج کے حصے کے طور پر البلد کی سیر کی سفارش کی ہے۔بچے اور بالغ یکساں طور پر کاریگروں کے اسٹوڈیو کے نجی دورے کے ساتھ اپنے فنکارانہ پہلو کو تلاش کرسکتے ہیں جہاں زائرین ایک دن کی پینٹنگ سے لطف اندوز ہوسکتے ہیں اور لکڑی پر کندہ اسلامی عبارات کے ڈیزائن کے بارے میں جان سکتے ہیں۔

جدہ کے قدیم علاقے البلد میں واقع قدیم عمارتیں۔
جدہ کے قدیم علاقے البلد میں واقع قدیم عمارتیں۔

طایف

گرمی سے بچنے کی کوشش میں سیر کے شوقین افراد سعودی عرب کے پُرفضا پہاڑی شہر طایف کا نظارہ کر سکتے ہیں۔ سعودی عرب میں یہ ایک حقیقی پوشیدہ ہیرا ہے۔

طایف ترشاوے پھل پیدا کرنے اور 700 سے زیادہ فارموں میں اگائے جانے والے خوشبودار گلاب کی وجہ سے مشہورہے۔ شہر تاریخی یادگاروں ، بازاروں ، مشہور چوراہوں ، منفرد باغات اور ثقافتی مقامات سے بھی بھراہوا ہے۔ خاندان مقامی فارموں کا دورہ کرسکتے ہیں اور مقامی اجزاء کی پیداوار کے راز جان سکتے ہیں،جہاں شہر انگور ، بیریوں ، انار اور انجیر جیسے مشہور ترش رو پھل اگاتا ہے۔

زائرین دن کے وقت پہاڑوں اور کھیتوں کے ذریعے اس علاقے کو سیر کر سکتے ہیں اور رات کو ستاروں کے شاندار تجربے سے لطف اندوز ہوسکتے ہیں۔

ابھا

ابھا کو سعودی عرب کے سردترین شہروں میں سے ایک کے طور پرمشہور ہے ،جو اسے موسم گرما کی تعطیلات کے لیے حتمی منزل بناتا ہے۔

خاندان تنومہ میں کوہ پیمائی کے نجی تجربے سے لطف اندوزہوسکتے ہیں۔ یہ ابھا شہر سے صرف دو گھنٹے کی ڈرائیو پرہے۔وہ جادوئی سودہ پہاڑ کو تلاش کر سکتے ہیں۔

سیاح القط العسیری کے روایتی فن کے بارے میں سیکھ کر سعودی عرب کے جنوب کے بارے میں اپنے علم میں خاطرخواہ اضافہ کرسکتے ہیں۔روایتی طور پر اندرونی دیواروں کی سجاوٹ کی ایک شکل،القط العسیری ایک قدیم خواتین آرٹ کی شکل ہےجسے عسیر خطے کی شناخت کا ایک اہم عنصر سمجھاجاتا ہے۔اس تکنیک میں گھروں کی اندرونی دیواروں کو القط یا پچی کاری سے ڈھانپنا شامل ہے۔

روم مقامی خواتین کے ساتھ عسیر کی سیر کا اہتمام کرسکتا ہے۔مقامی گائیڈ آرٹ کی شکل کی ابتدا کی وضاحت کرتے ہیں اور مہمانوں کو اس کی تاریخی اہمیت کے بارے میں سکھاتے ہیں۔

Abha

غوطہ خور بحیرہ احمر میں پیراکی کرتے ہوئے۔
غوطہ خور بحیرہ احمر میں پیراکی کرتے ہوئے۔

بحیرۂ احمر

آبی حیات کی 300 سے زیادہ اقسام کے ساتھ بحیرہ احمر متجسس مسافروں کے لیے سیر کی بہترین جگہ ہے۔ بحیرۂ احمر کی آبی حیات میں منٹا ، کچھوے ، مچھلیاں اور ڈولفن شامل ہیں۔اس کے علاوہ قدیم بحری جہازوں کے ڈھانچے اورملبے بھی دیکھنے کی چیز ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں