عالمی عدالت انصاف کے اندر سے اسرائیلی وفد کی ایک تصویر نے ہنگامہ برپا کر دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

نیدر لینڈز کے شہر ہیگ میں واقع عالمی عدالت انصاف نے 24 مئی کو جنوبی افریقہ کی درخواست پر اسرائیل کو رفح میں آپریشن روکنے کا حکم دے دیا۔ اس سماعت کے دوران عدالت کے ہال کے اندر سے دو تصاویر سوشل میڈیا پر پھیل گئیں اور انہوں نے ہنگامہ برپا کردیا۔

پہلی تصویر میں جنوبی افریقہ کے وفد کو دکھایا گیا جس کے پیچھے عدالت کے رکن ممالک کے نمائندوں کی ایک بڑی تعداد کھڑی تھی۔ دوسری تصویر میں اسرائیلی وفد تھا جس کے پیچھے پیچھے کوئی نہیں تھا۔

دونوں تصاویر پر سوشل میڈیا پر بڑے پیمانے پر رد عمل سامنے آیا۔ بہت سے لوگوں نے کہا کہ اسرائیل اکیلا کھڑا ہے، اور دنیا جنوبی افریقہ کے دعوے کی حمایت کرتی اور اس کے پیچھے کھڑی ہے۔

عالمی عدالت نے اسرائیل کو رفح کراسنگ کو بھی کھلا رکھنے کا حکم دیا تاکہ انسانی امداد کی بلا رکاوٹ رسائی کو یقینی بنایا جا سکے۔ تاہم یاد رہے اسرائیل نے عالمی عدالت کا حکم ماننے سے انکار کردیا ہے اور ہفتہ کے روز بھی اس نے رفح پر بمباری جاری رکھی اور مزید46 فلسطینیوں کو شہید کردیا۔ 232 دنوں سے جاری جارحیت میں صہیونی فورسز نے اب تک 35903 فلسطینیوں کو قتل کردیا ہے۔ شہید ہونے والوں میں زیادہ تر بچے اور خواتین شامل ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں