.

سعودی عرب میں ایک ارب ریال مالیت کی منشیات ضبط

وزارت داخلہ نے انسداد منشیات کی رپورٹ جاری کر دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
سعودی عرب کی وزارت داخلہ کے ترجمان بریگیڈئر جنرل منصور الترکی نے منشیات کی سمگلنگ میں ملوث گروہ کو گرفتار کرنے کا دعوی کیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ اس آپریشن میں ایک ارب سعودی ریال مالیت کی منشیات ضبط کی گئی ہیں۔

جنرل الترکی نے منشیات اور سکون آور ادویہ کا پھیلاؤ روکنے کے لئے خلاف بنائی گئی سیکیورٹی فورس کی پانچ مہینوں [جمادی الاول، جمادی الثانی، رجب، شعبان اور رمضان] کے کارکردگی کی رپورٹ پیش کی۔ وزارت داخلہ کے بیان کے مطابق قانون نافذ کرنے والے ادارے کے اہلکاروں نے 762 افراد کو منشیات کا دھندہ کرنے کے الزام میں گرفتار کیا۔ اس کارروائی میں ان کے پاس سے بڑے پیمانے پر منشیات برآمد کی گئیں۔

وزارت داخلہ کے سیکیورٹی ترجمان نے بتایا کہ متعلقہ اداروں نے شوال، ذی القعدہ اور ذی الحجہ سن 1433ھ میں 634 منشیات فروش گرفتار کئے۔ ان میں دو سو سات سعودی، 174 یمنی جبکہ 253 ملزمان کا تعلق 32 مختلف ملکوں سے بتایا جاتا ہے۔

منصور الترکی نے بتایا کہ ان ملزموں سے پکڑی گئی منشیات کی مالیت عالمی منڈی میں 886,316,219 سعودی ریال بنتی ہے۔

یاد رہے کہ منشیات کا کاروبار کرنے والوں کے خلاف قانون نافذ کرنے والے اداروں کے آپریشن کے دوران سمگلروں سے ان کی مدبھڑ بھی ہوتی رہی، جن میں 12 سیکیورٹی اہلکار زخمی جبکہ دو سرکاری اہلکار شہید ہوئے۔ آپریشن میں متعدد منشیات سمگلر بھی زخمی ہوئے۔