شہزادہ مقرن پروقار تقریب میں فرمان شاہی تسلیم کریں گے

انہیں شاہ عبداللہ نے جمعرات کو ولی عہد دوم نامزد کیا ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی شہزادہ مقرن بن عبدالعزیز اپنے ولی عہد دوم مقرر کیے جانے کے جاری کیے گئے شاہی فرمان کی اطاعت کا اگلے ایک دو روز میں اعلان کریں گے۔ اس سلسلے میں ایک شاہی تقریب اتوار یا پیر کو متوقع ہے۔

اس سے پہلے سعودی عرب کی شاہی عدالت نے جمعہ کے روز اعلان کیا تھا کہ شاہ عبداللہ بن عبدالعزیز نے جمعرات کے روز شہزادہ مقرن بن عبدالعزیز کو نائب ولی عہد مقرر کرنے کا حکم صادر فرماتے ہوئے اس امر کی تصدیق کی ہے کہ شہزادہ مقرن ولی عہد شہزادہ سلمان کے جانشین ہوں گے۔

خیال رہے شہزادہ مقرن سعودی عرب کے بانی شاہ عبدالعزیز کے سب سے چھوٹے صاحبزادے ہیں۔ وہ ولی عہد سلمان کا منصب خالی ہونے کی صورت میں اگلے ولی عہد ہوں گے۔

شاہی فرمان میں میں کہا گیا ہے کہ اس حکمنامے کو کسی بھی صورت تبدیل نہیں کیا جا سکتا ہے۔ ''العربیہ '' ٹی وی کے مطابق '' اس فرمان کو کوئی فرد تبدیل کر سکتا ہے، نہ کوئی وجہ اور بنیاد اس کی تبدیلی کا باعث بن سکتی ہے اور نہ ہی اس کی تشریح کے ذریعے کوئی تبدیلی کی جا سکتی ہے۔ ''

تاہم شہزادہ مقرن اپنی موجودہ ذمہ داریاں انجام دیتے رہیں گے۔ شہزادہ مقرن بن عبدالعزیز جو 1945 میں پیدا ہوئے تھے مملکت سعودی میں اہم مناصب پر فائز رہ چکے ہیں۔ کچھ عرصہ تک شاہ عبداللہ کے مشیر خصوصی رہنے کے بعد آج کل ناۃب وزیر اعظم کے طور پر فرائض انجام دے رہے ہیں۔

اس سے قبل شہزادہ مقرن 2005 سے 2012 کے دوران وہ سعودی انٹیلی جنس کے سربراہ رہ چکے ہیں۔ انہیں 1999 میں مدینہ کا گورنر بننے کا اعزاز بھی ملا۔ جبکہ 1964 سے 1980 تک انہوں نے سعودی ائیر فورس میں ذمہ داریں نبھائیں۔ انہوں نے 1968 میں لندن سے ایروناٹکس میں گریجوایشن کی ڈگری لی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں