.

سعودی عرب : اورلینڈو میں فائرنگ کے واقعے کی شدید مذمت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب نے امریکی ریاست فلوریڈا کے شہر اورلینڈو میں فائرنگ کے واقعے کی شدید مذمت کی ہے۔ایک روز پہلے اورلینڈو میں ہم جنس پرستوں کے ایک نائٹ کلب میں ایک مسلح شخص کی فائرنگ سے پچاس افراد ہلاک اور پچاس سے زیادہ زخمی ہوگئے ہیں۔

واشنگٹن میں متعیّن سعودی سفیر عبداللہ آل سعود نے سوموار کو ایک بیان میں کہا ہے کہ ''سعودی مملکت اورلینڈو ،فلوریڈا میں بے گناہ افراد پر حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتی ہے اور مقتولین اور مجروحین کے خاندانوں اور دوستوں کے ساتھ تعزیت اور امریکی عوام سے ہمدردی کا اظہار کرتی ہے''۔

شہزادہ عبداللہ نے کہا کہ سعودی عرب امریکی عوام کے ساتھ کھڑا ہے اور وہ حملے میں زخمی ہونے والوں کی جلد صحت یابی کے لیے دعاگو ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ سعودی عرب امریکا اور عالمی برادری کے ساتھ مل کر تشدد اور دہشت گردی کی اس طرح کی احمقانہ کارروائیوں کے خاتمے کے لیے کام کرنے کا خواہاں ہے۔

اورلینڈو کے پلس نائٹ کلب میں اتوار کو علی الصباح حملہ امریکا کی جدید تاریخ میں فائرنگ کا بدترین واقعہ ہے۔یہ فائرنگ افغان نژاد امریکی شہری عمر ایس متین نے کی ہے۔عراق اور شام میں برسرپیکار سخت گیر جنگجو گروپ داعش نے اس حملے کی ذمے داری قبول کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔

امریکی حکام اب اس امر کی تحقیقات کررہے ہیں کہ آیا حملہ آور کا داعش سے کوئی تعلق تھا یا اس نے ان سے متاثر ہوکر یہ حملہ کیا تھا۔تاہم امریکی حکام کا کہنا ہے کہ مکمل تحقیقات سے قبل حملہ آور کے محرکات اور داعش کے اس سے تعلق کے حوالے سے کچھ کہنا قبل از وقت ہوگا۔