.

یمن کے 40 باغی اشتہاری قرار، گرفتاری میں معاونت پرانعام مقرر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی حکومت نے یمن میں دہشت گردی اور آئینی حکومت کا تختہ الٹنے میں ملوث 40 باغیوں کو اشتہاری قرار دیتے ہوئے ان کی گرفتاری میں معاونت پر انعامات کا اعلان کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سعودی عرب کی حکومت کی طرف سے گذشتہ روز جاری کردہ فہرست میں یمن کے ان 40 باغیوں کو شامل کیا گیا ہے جو حوثی گروپ کے ساتھ وابستگی کے ساتھ دہشت گردی کی سرگرمیوں میں ملوث ہیں۔

الریاض نے تمام اشتہاریوں کی گرفتاری میں معاونت کرنے والے شہریوں کو انعامات دینے اور ان کا نام صیغہ راز میں رکھنے کا اعلان کیا ہے۔

خیال رہے کہ سعودی عرب کی وزارت داخلہ کی طرف سے یمن کے حوثی باغیوں کو اشتہاری قرار دینے اور ان کی گرفتاری میں معاونت سے متعلق یہ پہلی فہرست ہے۔

اشتہاریوں کی فہرست اور ان کی گرفتاری پر مقرر کردہ انعامی رقم

1 - عبدالملك بدر الدين الحوثي ، سر کی قیمت 30 ملین ڈالر

2 - صالح علي الصماد : 20 ملین ڈالر

3 - محمد علي عبدالكريم الحوثي: 20 ملین ڈالر

4 - زكريا يحيى الشامي : 20 ملین ڈالر

5 - عبدالله يحيى أبو الحاكم : 20 ملین ڈالر

6 - عبد الخالق بدر الدين الحوثي : 20 ملین ڈالر

7 - محمد ناصر العاطفي : 20 ملین ڈالر

8 - يوسف أحسن إسماعيل المداني: 20 ملین ڈالر

9 - عبدالقادر أحمد قاسم الشامي : 20 ملین ڈالر

10- عبدالرب صالح جرفان: 20 ملین ڈالر

11- يحيى محمد الشامي مبلغ المكافأة : 20 ملین ڈالر

12 - عبدالكريم أمير الدين الحوثي : 15 ملین ڈالر

13 - يحيى بدر الدين الحوثي : 10 ملین ڈالر

14 - حسن محمد زيد : 10 ملین ڈالر

15 - سفر مغدي الصوفي : 10

16 - محمد عبدالكريم الغماري : 10 ملین ڈالر

17 - عبدالرزاق محمد المروني: 10 ملین ڈالر

18 - عامر علي المراني : 10 ملین ڈالر

19 - إبراهيم علي الشامي : 10 ملین ڈالر

20 - فضل محمد المطاع : 10 ملین ڈالر

21 - محسن صالح الحمزي : 10 ملین ڈالر

22 - أحمد صالح هندي دغسان : 10 ملین ڈالر

23 - يوسف عبدالله حسين الفيشي : 10 ملین ڈالر

24 - حسين حمود العزي: 5 ملین ڈالر

25 - أحمد محمد يحيى حامد : 5 ملین ڈالر

26 - طلال عبدالكريم عقلان: 5 ملین ڈالر

27 - عبدالإله محمد حجر : 5 ملین ڈالر

28 - فارس محمد حسن مناع : 5

29 - أحمد عبدالله عقبات : 5 ملین ڈالر

30 - عبداللطيف حمود المهدي : 5 ملین ڈالر

31 - عبدالحكيم هاشم الخيواني : 5 ملین ڈالر

32 - عبدالحافظ محمد السقاف : 5 ملین ڈالر

33 - مبارك المشن الزايدي : 5 ملین ڈالر

34 - علي سعيد الرزامي : 5 ملین ڈالر

35 - صالح مسفر الشاعر : 5 ملین ڈالر

36 - علي حمود الموشكي : 5 ملین ڈالر

37 - محمد شرف الدين: 5 ملین ڈالر
38 - ضيف الله قاسم الشامي: 5 ملین ڈالر

39 - أبو علي الكحلاني : 5 ملین ڈالر

40 - علي ناصر قرشة : 5 ملین ڈالر

ادھر یمن میں دستوری حکومت کا تختہ الٹنے والے باغیوں کو کچلنے اور آئینی حکومت کی رٹ بحال کرنے کے لیے سعودی عرب کی قیادت میں قائم عرب اتحاد نے الزام عاید کیا ہے کہ ایران یمن کے حوثی باغیوں کو بیلسٹک میزائل فراہم کررہا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق گذشتہ روز الریاض میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب میں عرب اتحاد کے ترجمان کرنل ترکی المالکی نے کہا کہ یمن کے حوثی باغیوں کی سعودی عرب کے خلاف خطرناک جارحیت اور بیلسٹک میزائل حملوں کے پیچھے ایران کا ہاتھ ہے۔ حوثی شدت پسند ایران کی معاونت سے سعودی عرب پر حملے کررہے ہیں۔

پریس کانفرنس کے دوران کرنل ترکی المالکی نے ایران کی طرف سے یمنی باغیوں کو اسلحہ اور میزائلوں کی فراہمی کی تصاویری ثبوت بھی دکھائے۔ ان کا کہنا تھا کہ ایران کے علاوہ لبنانی دہشت گرد ملیشیا حزب اللہ بھی حوثیوں کو اسلحہ، جنگی تربیت اور تکنیکی معاونت فراہم کرتی ہے۔