.

ارب پتی امریکی نے 3.4 ارب ڈالر خیراتی کاموں کے لئے عطیہ کر دیئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ارب پتی امریکی شہری وارین بافٹ نے اپنی دولت کا ایک بڑا حصہ خیراتی اور فلاحی کاموں کے لیے عطیہ کرنے کا اعلان کیا ہے۔

’العربیہ ڈاٹ نیٹ‘ کے مطابق بافٹ کی کمپنی کی طرف سے جاری ایک بیان میں بتایا گیا ہے کہ وارن بافٹ نے اپنی دولت میں سے تین ارب 40 کروڑ ڈالر فلاحی کاموں کے لیے دینے کا اعلان کیا ہے۔

امریکی دولت مند کی طرف سے عطیہ کی گئی رقم پانچ فلاحی اداروں کے ذریعے صرف کی جائے گی۔ امریکی تاریخ میں کسی کاروباری شخص کا اتنی بڑی رقم عطیہ کرنے کا یہ پہلا واقعہ ہے۔

اُنہوں نے گذشتہ برس بھی امریکی ارب پتی بل گیٹس کی فلاحی تنظیم بل ومیلینڈا گیٹس کو ایک بڑی رقم عطیہ کی تھی۔ ان کے خاندان کی چار دوسری فلاحی تنظمیں بھی انسانی بہبود کے منصوبوں پرکاموں پر پیسے صرف کرتی ہیں۔ ان کے خاندان کی ایک کمپنی تعلیم کے شعبے پر توجہ مرکوز کیے ہوئے ہے جو ان کی اہلیہ سوزان کے نام سے کام کر رہی ہے۔ شیرووڈ فاؤنڈیشن ان کی بیٹی، ھوارڈ جے بافٹ ان کے بڑے بیٹے، نوفو چھوٹے بیٹے بافٹ پیٹر اور اہلیہ جینیفر کے نام سے کام کام کرتی ہے۔

ان فلاحی تنظیموں کو بافٹ 31 ارب ڈالر کی رقم دے چکے ہیں۔ سنہ 2006ء میں انہوں نے اپنی دولت بہ تدریج فلاحی کاموں پر صرف کرنے کا سلسلہ شروع کر دیا تھا۔ ان کی وجہ سے کئی دوسرے دولت مندوں کو بھی فلاحی کاموں کے لیے خیرات کرنے کا حوصلہ ملا۔

بافٹ نے بل گیٹس کی بل وملینڈا گیٹس کی فاؤنڈیشن کے ساتھ 2010ء میں ایک معاہدہ کیا تھا جس کے تحت دنیا کے ارب پتی لوگوں کو اپنی دولت اعلانیہ فلاحی کاموں کے لیے صرف کرنے کی ترغیب دینے کا فیصلہ کیا گیا۔ بزنس جریدے ’فوربز‘ کے مطابق بافٹ کی دولت 82 ارب ڈالر سے زیادہ ہے۔ بل گیٹس اور امازون کمپنی کے چیف ایگزیکٹو بیزوس کے بعد دنیا کے تیسرے امیر ترین شخص ہیں۔