میکسیکو: 12 سالہ ننھا "عبقری" بائیو میڈیکل فِزکس کے میدان میں اُترنے کے لیے پُرعزم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

میکسیکو میں 12 سالہ کارلوس اینٹونیو سانتاماریا پیر کے روز "نیشنل یونیورسٹی آف میکسیکو" میں بائیو میڈیکل فِزکس کے شعبے میں قدم رکھے گا تو وہ مذکورہ یونیورسٹی کا کم عمر ترین طالب ہونے کا اعزاز حاصل کر لے گا۔

یونیورسٹی میں منعقد ایک پریس کانفرنس کے دوران کارلوس نے واضح کیا کہ "میرا مقصد بنیادی عناصر کی فراہمی ہے تا کہ ڈاکٹر اور سائنس دان حضرات حیاتیاتی مسائل کے حل تلاش کر سکیں"۔

یونیورسٹی انتظامیہ کے مطابق داخلہ ٹیسٹ میں بہترین کامیابی حاصل کرنے کے بعد "انتہائی اعلی صلاحیتوں کا مالک" کارلوس پیر کے روز سے اپنی بائیو میڈیکل فزکس کی تعلیم کا آغاز کرے گا۔ البتہ کارلوس کو یہ پسند نہیں کہ اسے "غیر معمولی ذہین" کے نام سے پکارا جائے۔

کارلوس کا کہنا ہے کہ وہ یونیورسٹی کے اندر "علم کی پیاس" لے کر داخل ہو گا۔

ننھے طالب علم کو وڈیو گیمز کا شوق ہے۔ اس کے علاوہ وہ آسان سائنسی دستاویزات اور کلاسیکل ادب پڑھنے سے بھی بہت شغف رکھتا ہے۔

کارلوس کے مطابق بالغ افراد کا ساتھ دل چسپ ہے تاہم دیگر بچوں کے ساتھ اُس کا تعلق "دشوار" امر ہے۔ اُس کی خواہش ہے کہ مذکورہ یونیورسٹی (اس کے جیسے) بچوں کے ایک گروپ کا استقبال کرے اور اس میں داخلے کا خواہش مند ہر بچّہ امتحان میں شریک ہو۔

کارلوس کے نزدیک میکسیکو کو تعلیم و تربیت کی کمی کے سبب آندھی کا سامنا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں