.

یمنی حکومت اور حوثی وفد کے درمیان قیدیوں کی فہرستوں کا تبادلہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کی آئینی حکومت اور حوثی باغیوں نے اپنے اسیران کی فہرستوں کا تبادلہ کیا ہے تاکہ منگل کے روز سویڈن میں ہونے والے مذاکرات کے تناظر میں طرفین کے درمیان قیدیوں کا تبادلہ ممکن ہو سکے۔

یمنی حکومتی وفد نے 8200 جبکہ حوثی نمائندگان نے 7000 اسیران کی فہرست پیش کی۔ معاہدے کے مطابق فہرستوں کے تبادلے کے بعد تمام قیدیوں کو 45 دنوں کے اندر رہا کیا جانا ضروری ہے۔

پیر کے روز یمن کے لئے اقوام متحدہ کے نمائندے مارٹن گریفتھس نے بتایا کہ وہ مذاکرات کے اگلے مرحلے میں یمنی قضیئے کا تفصیلی منصوبہ پیش کریں گے۔

انھوں نے امید ظاہر کی کہ یمن قضیئے کے تمام فریق نئے سال کے آغاز پر مذاکرات کے نئے مرحلے کے انعقاد پر راضی ہو جائیں گے۔