.

سعودی عرب:کووِڈ-19 کے یومیہ کیس اگست کے بعد پہلی مرتبہ ایک ہزار سے متجاوز

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں گذشتہ سال اگست کے بعد پہلی مرتبہ کروناوائرس کے یومیہ کیسوں کی تعداد ایک ہزار سے متجاوز ہوگئی ہے۔ سعودی وزارتِ صحت نے منگل کے روز کووِڈ-19 کے 1070نئے کیسوں کی تشخیص کی اطلاع دی ہے جبکہ اس مہلک وائرس کا شکار 12 مریض وفات پاگئے ہیں۔

سعودی حکام کا کہنا ہے کہ لوگ کرونا وائرس سے بچاؤ کے لیے احتیاطی تدابیر کی پاسداری نہیں کررہے ہیں۔اس وجہ سے یومیہ کیسوں کی تعداد بڑھ رہی ہے۔وزارت داخلہ نے خبردار کیا ہے کہ اگر لوگوں نے خلاف ورزیوں کا سلسلہ جاری رکھا تو لاک ڈاؤن اور شہروں کی بندش سمیت دوبارہ سخت پابندیاں عاید کی جاسکتی ہیں۔

وزارتِ صحت کے مطابق اب کروناوائرس کے کل کیسوں کی تعداد 407010 ہوگئی ہے۔ان میں سے 6846 وفات پاچکے ہیں۔حالیہ دنوں میں کووِڈ-19 کا شکار ہونے والے مزید 940 مریض تن درست ہوگئے ہیں اور اب صحت یاب ہونے والے کل کیسوں کی تعداد 390538 ہوگئی ہے۔

گذشتہ 24 گھنٹے میں دارالحکومت الریاض میں سب سے زیادہ کیس ریکارڈ کیے گئے ہیں۔ان کی تعداد 483 ہے۔ مکہ مکرمہ میں 209 اورمنطقہ مشرقی میں 157نئے کیسوں کی تشخیص ہوئی ہے۔

واضح رہے کہ سعودی عرب میں جنوری میں کرونا وائرس کے یومیہ کیسوں کی تعداد ایک سو سے بھی کم رہ گئی تھی جبکہ جون 2020ء میں سب سے زیادہ یومیہ کیس ریکارڈ کیے گئے تھے اور تب ایک دن میں تشخیص شدہ کیسوں کی تعداد چار ہزار سے بڑھ گئی تھی لیکن گذشتہ دو ماہ کے دوران میں کووِڈ کے یومیہ کیسوں کی تعداد میں اضافے کا رجحان ریکارڈ کیا گیا ہے اور اب یومیہ کیسوں کی تعداد ایک ہزار سے متجاوز ہوگئی ہے۔

وزارت صحت کا کہنا ہے کہ نئے تشخیص شدہ کیسوں میں 55 فی صد خواتین ہیں۔اس نے لوگوں کو ہدایت کی ہے کہ وہ چہرے پر ماسک پہن کررکھیں،باہمی میل جول میں فاصلہ برقرار رکھیں اورکووِڈ-19 کی ویکسین کے انجیکشن لگوائیں تاکہ اس مہلک وائرس کو مملکت میں دوبارہ پھیلنے سے روکا جاسکے۔