.

یواےای:مکینوں اور شہریوں کے لیے بے روزگاری فوائد اسکیم کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات نے نجی اور سرکاری شعبوں میں کام کرنے والے کارکنوں کے لیے بے روزگاری فوائد اسکیم کا اعلان کیا ہے۔

یواے ای کی کابینہ نے گذشتہ پیرکو حکومت کی جانب سے شروع کردہ ملازمت کے تحفظ کے ایک بڑے اقدام کے حصے کے طور پربے روزگاری کے فوائد مہیّا کرنے کی اسکیم کی منظوری دی تھی۔

مقامی میڈیا کے مطابق یہ قانون قومیت سے قطع نظر تمام ملازمین پر لاگو ہوتا ہے اور2023ء میں نافذ العمل ہوگا۔اس کے فوائد کا سرمایہ کاروں، گھریلو ملازمین، عارضی کنٹریکٹ ورکرز، پنشن حاصل کرنے والے ریٹائرڈ افراد، نئی ملازمت میں داخل ہونے والوں اور 18 سال سے کم عمر افراد پر اطلاق نہیں ہوتا۔

مقامی ذرائع ابلاغ کے مطابق یہ رقم ماہانہ نقدی کی صورت میں کی ادا جائے گی، یہ نظام انشورنس پیکج کی طرح کام کرے گا جہاں رہائشی ہرسال ایک مخصوص رقم بے روزگاری فنڈ میں ادا کرتے ہیں۔

غیرمتوقع حالات میں روزگار سے محروم ہونے والے ملازمین کو مبیّنہ طور پر اپنی تنخواہ کا 60 فی صد یا محدود وقت کے لیے 5445 ڈالر (20,000 اماراتی درہم) ماہانہ ملیں گے جس سے انھیں اپنی آمدنی برقرار رکھنے میں مدد ملے گی۔

بعض رپورٹس میں کہا گیا ہے کہ انشورنس لازمی ہوگی، اگرچہ اس کی آزادانہ طور پر تصدیق نہیں کی جا سکی۔توقع ہے کہ موجودہ انشورنس کمپنیاں ملک کے اہل رہائشیوں کو مختلف قسم کی اسکیمیں پیش کریں گی۔

یہ نئی تبدیلیاں یواے ای میں باصلاحیت افراد کو راغب کرنے اورٹیلنٹ کو برقرار رکھنے کے لیے ملک کے وسیع تر وژن کے حصے کے طور پر کی جارہی ہیں۔امارت دبئی نے حال ہی میں غیرشادی شدہ اورمخالف جنسوں کی ہم بستری کی اجازت بھی دے دی ہے اور شراب کے استعمال کوغیرقانونی قرار نہ دینے کا اعلان کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں