روس اور یوکرین

یوکرین نے ویگنر سربراہ کے بَخموت پر قبضے کے دعوے کی تردید کر دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

یوکرین کی فوج نے ہفتے کے روز روس کے نجی عسکری گروپ ویگنرکے سربراہ کے جنگ شدہ مشرقی شہر بَخموت پرمکمل کنٹرول کے دعوے کی تردید کردی ہے اور کہا ہے کہ اس کے فوجی وہاں لڑائی جاری رکھے ہوئے ہیں۔

روس کے ویگنرگروپ کے سربراہ کی جانب سے شہر کا مکمل کنٹرول حاصل کرنے کے اعلان کے بعد یوکرینی فوج کے ترجمان سرہئی شیریفاتئی نے کہا کہ ’’یہ سچ نہیں ہے‘‘۔انھوں نے خبررساں ادارے رائٹرزکو بتایا کہ ہمارے یونٹ بَخموت میں لڑ رہے ہیں۔

یوکرین کی نائب وزیردفاع حنامالیارنے بھی کہا ہے کہ بَخموت میں صورت حال نازک ہے اور یوکرین کے فوجی شہرکے جنوب مغربی حصے میں اپنا دفاع برقرار رکھے ہوئے ہیں۔

انھوں نے ٹیلی گرام میسجنگ ایپ پرکہا:’’ بَخموت میں شدید لڑائی جاری ہے۔اب تک، ہمارے محافظوں کا علاقے اور نجی شعبے میں کچھ صنعتی اور بنیادی ڈھانچے کی تنصیبات پرکنٹرول برقرار ہے‘‘۔

قبل ازیں روس کے جنگجو گروپ ویگنرکے سربراہ یوفگینی پریگوژن نے ٹیلی گرام پرجاری کردہ ایک ویڈیومیں یوکرین کے شہربَخموت پرمکمل قبضے کا دعویٰ کیا ہے۔اس ویڈیو میں وہ روسی جھنڈے اور ویگنرکے بینراٹھائے جنگجوؤں کی ایک قطارکے سامنے جنگی وردی میں نظر آئے ہیں۔

پریگوژن نے کہا:’’آج 20 مئی کو دوپہر 12 بجے، بَخموت کامکمل طور پر کنٹرول حاصل کرلیا گیا ہے‘‘۔انھوں نے یہ بھی کہاکہ ان کے جنگجو آرام اور بحالی کے لیے 25 مئی سے بَخموت سے واپس چلے جائیں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں