ترک صدرطیب ایردوآن کا اعلانِ فتح؛عالمی لیڈروں کے تہنیتی پیغامات

صدرایردوآن مظلوم مسلمانوں کے لیے طاقت کا ستون اوران کے ناقابل تنسیخ حقوق کی پرجوش آواز ہیں:شہباز شریف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

ترکیہ کے صدر رجب طیب ایردوآن نے اتوار کے روز ہونے والے تاریخی انتخابات میں اپنی کامیابی کا اعلان کردیا ہے۔عالمی لیڈروں نے صدارتی انتخابات کے دوسرے مرحلے میں شاندار کامیابی پر انھیں مبارک باد کے پیغامات بھیجے ہیں اور ان کے لیے تہنیتی پیغامات کا تانتا بندھ گیا ہے۔

طیب ایردوآن نے اتوار کی شب استنبول میں اپنے آبائی علاقے میں ایک بس سے اپنے حامیوں سے خطاب کیا اور کہا کہ ہم آنے والے پانچ سال تک ملک پر حکمرانی کریں گے۔ ان شاءاللہ ہم آپ کے اعتماد پر پورا اتریں گے۔

انھوں نے اپنے حق میں ووٹ ڈالنے پرترک عوام کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ انھوں نے ان کے حریف امیدوارکمال کلیچ داراوغلو کے خلاف ووٹنگ میں ان کی مکمل حمایت کی ہے۔

اتوار کو رات گئے تک سرکاری طور پرصدارتی انتخابات کے حتمی نتائج جاری نہیں کیے گئے ہیں، لیکن زیادہ تر بیلٹ بکسوں کی گنتی مکمل ہوچکی ہے اور ان کے اعداد و شمار کے مطابق طیب ایردوآن قریباً 52 فی صد حمایت کے ساتھ آگے ہیں۔

تہنیتی پیغامات

پاکستان کے وزیراعظم شہبازشریف نے رجب طیب ایردوآن کو تاریخی انتخابات میں ترکیہ کا دوبارہ صدر منتخب ہونے پرمبارک باد دیتے ہوئے کہا ہے کہ وہ ان چند ایک عالمی رہ نماؤں میں سے ہیں جن کی سیاست عوامی خدمت پر مبنی ہے اور مؤثرانداز میں تسلسل سے جاری ہے۔ وہ مظلوم مسلمانوں کے لیے طاقت کا ستون اور ان کے ناقابل تنسیخ حقوق کے لیے ایک پرجوش آواز رہے ہیں۔

وزیراعظم نے تہنیتی ٹویٹ میں کہا کہ ’’ میں اپنے پیارے بھائی رجب طیب ایردوآن کو ترکیہ کا دوبارہ صدر منتخب ہونے دل کی گہرائیوں سے مبارک باد دیتا ہوں۔پارلیمانی انتخابات میں ان کی جماعت کی قیادت میں اتحاد کی جیت اور اب صدارتی انتخابات میں ان کی کامیابی بہت سے پہلوؤں سے اہمیت کی حامل ہے اور اس سے ان کی متحرک قیادت پر ترک عوام کی بھرپورحمایت اور اعتماد کی عکاسی کرتی ہے‘‘۔

شہبازشریف نے اس عزم کا اظہار کیا ہے کہ پاکستان اور ترکیہ کے درمیان دوطرفہ برادرانہ تعلقات بلندی کی جانب گامزن رہیں گے۔ میں دونوں ممالک کے درمیان بہترین بھائی چارے کی مناسبت سے اپنی تزویراتی شراکت داری کو مزیدمضبوط کرنے کے لیے ان کے ساتھ کام کرنے کا شدت سے منتظر ہوں۔

امیرِقطرشیخ تمیم بن حمدآل ثانی نے ترکیہ کے صدارتی انتخابات کے حتمی نتائج کے اعلان سے قبل ہی صدر رجب طیب اردوان کو ان کی کامیابی پر مبارک باد دے دی ہے۔

ایک ٹویٹ میں امیرِقطر نے طیب ایردوآن کی نئی صدارتی مدت میں کامیابی کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کیا ہے۔

فلسطینی وزیراعظم محمد اشتییہ نے صدرطیب ایردوآن اور ترک عوام کو انتخابات میں کامیابی پر مبارک باد دی ہے۔ہنگری کے وزیراعظم وکٹر اوربان نے ترک صدر کو انتخابات کے دوسرے مرحلے میں ان کی ناقابل تردید کامیابی پرمبارک باد دی ہے۔

لیبی وزیراعظم عبدالحمید الدبیبہ نے بھی رجب طیب ایردوآن کو ان کی کامیابی پر مبارک باد پیش کی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ صدر ایردوآن کی 'انتخابی فتح' ان کے کامیاب منصوبوں اور پالیسیوں پر ترک عوام کے اعتماد کی تجدید ہے۔ طرابلس میں قائم قومی اتحاد کی حکومت کو ترکیہ کی حمایت حاصل ہے اور وہ لیبیا کے مشرق میں قائم متوازی حکومت کے خلاف ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں