افغانستان سے ٹی ٹی پی کے دہشت گردوں کی دراندازی روکتے ہوئے چار پاکستانی فوجی شہید

سکیورٹی فورسز کی کارروائیوں میں دہشت گردوں کا سرغنہ اپنے تین ساتھیوں سمیت ہلاک ہو گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق مردان میں سکیورٹی فورسز کے آپریشن کے دوران دہشت گردوں کا سرغنہ ہلاک جبکہ پارا چنار میں کارروائی کے دوران لانس نائیک وطن پر قربان ہو گیا۔

آئی ایس پی آر کے مطابق سکیورٹی فورسز نے خفیہ اطلاع پر مردان کے جنرل ایریا کاٹلنگ میں آپریشن کیا، آپریشن میں دہشت گردوں کا سرغنہ فیصل مارا گیا۔

آئی ایس پی آر کے مطابق ہلاک دہشت گرد کئی کارروائیوں میں مطلوب تھا ، دہشت گرد سے اسلحہ و بارود برآمد ہوا۔

دوسری جانب پارا چنار میں بھی دہشت گردوں کا سکیورٹی فورسز سے مقابلہ ہوا، فائرنگ کے تبادلے میں لانس نائیک غیرت خان شہید ہو گیا۔

پاک افغان سرحد کے قریب ضلع ژوب کے علاقے سمبازہ میں سکیورٹی فورسز سے فائرنگ کے تبادلے کے دوران چار جوان شہید جبکہ ٹی ٹی پی کے تین دہشت گرد ہلاک ہو گئے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق 28 ستمبر کو پونے چھ بجے سکیورٹی فورسز نے پاک افغان سرحد کے قریب ٹی ٹی پی کے دہشت گردوں کی افغانستان سے پاکستان میں دراندازی کی کوشش ناکام بنائی۔

دوران آپریشن حوالدار ستار، لانس نائیک شیر اعظم، لانس نائیک عدنان اور سپاہی ندیم نے بہادری سے مقابلہ کرتے ہوئے شہید ہو گئے۔ فائرنگ کے تبادلے کے دوران تین دہشت گرد بھی ہلاک ہوئے جبکہ متعدد دہشت گرد زخمی ہوئے۔

ترجمان آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ پاکستان کی سکیورٹی فورسز ملک میں امن اور خوشحالی کے دشمنوں کی کوششوں کو ناکام بناتے رہیں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں