مسجد اقصی: اسرائیلی پولیس کا مسلمانوں پر گرینیڈز سے حملہ

اسرائیلی پارلیمنٹ میں آج مسجد اقصی کو یہودیانے کی بحث متوقع

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اسرائیلی پولیس نے مسجد اقصی میں مسلمانوں پر گرینیڈز سے حملے کیا ہے، ان حملوں کا ہدف منگل کی صبح مسجد کے صحن میں جمع ہونے والے مسلمان تھے۔ اس موقع پر اسرائیلی پولیس کے ترجمان کے مطابق مسلمانوں نے بھی جواباً پولیس پر پتھراوّ کیا ہے۔

واضح رہے یہ تصادم ایسے دن سامنے آیا ہے جب منگل کی شام اسرائیلی پارلیمنٹ میں مسجد اقصی کو یہودیانے کے حوالے سے ایک گرما گرم بحث شروع ہونے والی ہے۔

اسرائیلی حکومت نے مسجد اور اس کے آس پاس پولیس کی بھاری نفری تعینات کر رکھی ہے تاکہ مبینہ ہیکل سلیمانی کا کنٹرول اپنے پاس رکھا جا سکے۔ تعینات اسرائیلی پولیس یہودی زائرین کے لیے سہولیات فراہم کرنے کی ذمہ داری بھی انجام دے رہی ہے۔

مسجد اقصی مقبوضہ یروشلم کے پرانے شہر میں قائم ہے۔ جسے مسلمان بیت المقدس کے نام سے موسوم کرتے ہیں۔ یہ مسلمانوں کا قبلہ اول اور تیسرا مقدس ترین مرکز ہے۔ آج بھی تمام تر اسرائیلی رکاوٹوں کے باوجود مسجد اقصی کے انتظامی امور مسلمان چلاتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں