.

عراق: خودکش بم دھماکا، 15 افراد ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق کے دارالحکومت بغداد میں شیعہ اکثریتی علاقے کاظمیہ میں خودکش بم دھماکے کے نتیجے میں پندرہ افراد ہلاک اور چالیس سے زیادہ زخمی ہوگئے ہیں۔

عراقی پولیس کے ایک کرنل نے بتایا ہے کہ حملہ آور بمبار نے کاظمیہ کے عدن اسکوائر میں واقع ایک ریستوراں کے اندر خود کو دھماکے سے اڑایا ہے جبکہ وزارت داخلہ اور میڈیکل حکام کا کہنا ہے کہ حملہ آور نے کاظمیہ کے مصروف چوک میں بم دھماکا کیا ہے۔انھوں نے بم دھماکے میں تینتالیس افراد کے زخمی ہونے کی اطلاع دی ہے۔

بغداد میں گذشتہ تین روز میں یہ دوسرا خودکش بم دھماکا ہے۔ہفتے کے روز بغداد الجدیدہ میں ایک ریستوراں میں خودکش بم دھماکے کے نتیجے میں تیئس افراد ہلاک ہوگئے تھے۔

فوری طور پر کسی گروپ نے سوموار کو کاظمیہ میں خودکش بم دھماکے کی ذمے داری قبول نہیں کی ہے۔تاہم عراق کے شمال اور شمال مغرب میں واقع قریباً پانچ صوبوں پر اس وقت قابض سخت گیر جنگجو گروپ داعش پر ماضی میں اس طرح کے خودکش بم دھماکوں میں ملوّث ہونے کے الزامات عاید کیے جاتے رہے ہیں اور اس گروپ نے خود بھی بغداد کے شیعہ آبادی والے علاقوں میں متعدد مرتبہ بم حملوں یا کار بم دھماکوں کی ذمے داری قبول کی ہے۔