رمضان میں مطاف کا صحن معتمرین اور زیرِ زمین منزل معتکفین کے لیے مختص ہو گی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مکہ مکرمہ کے گورنر اور مرکزی حج کمیشن کے سربراہ شہزادہ خالد الفیصل نے ہدایات جاری کی ہیں کہ رمضان کے مہینے میں مطاف کا صحن صرف معتمرین کے لیے مختص کر دیا جائے۔ اس اقدام کا مقصد یہ ہے کہ معتمرین اپنے مناسک پوری سہولت اور راحت کے ساتھ ادا کر سکیں۔

حرمین شریفین کی پریذیڈینسی کی جانب سے جاری بیان کے مطابق رمضان کے مہینے میں مذکورہ ممانعت کا دورانیہ نماز مغرب سے لے کر نماز تروایح کے اختتام تک ہوگا۔ بعد ازاں آخری عشرے میں دورانیے کو بڑھا کر نماز تہجّد تک کر دیا جائے گا۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ آخری عشرے کے دوران اعتکاف کے خواہش مند حضرات کے لیے زیر زمین منزل (تہہ خانے) کو مختص کیا جائے گا۔

دوسری جانب سعودی عرب میں وزارت حج و عمرہ نے اعلان کیا ہے کہ رواں سال (1439ہجری میں) حج کے خواہش مند تمام سعودی شہری اور غیر ملکی مقیمین حج سیزن میں حجاج کرام کے لیے خدمات پیش کرنے والی اجازت یافتہ کمپنیوں اور اداروں میں رجسٹریشن کی کارروائی شروع کر دیں۔

وزارت نے واضح کیا کہ تمام لوگوں کو ان کے لیے مناسب سروس اور معاوضہ اختیار کرنے کا موقع دیا جائے گا۔ یہ عمل دو مرحلوں پر مشتمل ہو گا۔ پہلا مرحلہ (پروگرامز اور سروس پیکجز کا تعارف) اختیاری ہو گا جو رمضان کے نصف یعنی 30 مئی 2018 سے شروع ہو کر شوال کے اختتام یعنی 13 جولائی 2018ء تک جاری رہے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں