شام کے جنوبی صوبے درعا میں فضائی حملوں میں 22 شہری ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

شام کے جنوبی صوبے درعا میں باغیوں کے زیر قبضہ علاقے پر روسی فضائیہ کے حملوں میں بائیس شہری ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے ہیں۔

برطانیہ میں قائم شامی رصدگاہ برائے انسانی حقوق نے اطلاع دی ہے کہ روس کے لڑاکا طیاروں نے جمعرات کو جنوبی قصبے السیفرا پر 35 حملے کیے ہیں ۔ ایک حملے میں ایک تہ خانے کو نشانہ بنایا گیا تھا جس کے نتیجے میں پانچ بچوں سمیت سترہ شہری مارے گئے ہیں ۔

رصدگاہ کا کہنا ہے کہ وہ فضائی حملے کرنے والے طیاروں کا تعیّن ان کی قسم ، استعمال کیے گئے بموں ، مقامات اور پروازوں کے انداز سے کرتی ہے۔اس نے مزید بتایا ہے کہ منگل کی شب اسی قصبے پر فضائی حملوں کے بعد اس کا واحد اسپتال بھی ناکارہ ہوگیا تھا۔

درعا ہی میں باغیوں کے زیر قبضہ ایک اور علاقے پر فضائی بمباری سے پانچ شہری مارے گئے ہیں۔رصدگاہ کے سربراہ رامی عبدالرحمان کا کہنا ہے کہ 19 جون کو فضائی حملوں میں شدت کے بعد شام میں ایک دن میں یہ سب سے زیادہ ہلاکتیں ہیں۔

شامی فوج نے ملک کے جنوب میں باغیوں کے زیر قبضہ علاقوں پر 19 جون کو فضائی بمباری شروع کی تھی۔اس کے اتحادی روس کے لڑاکا طیاروں نے 23 جون کو اس علاقے میں اس سال میں پہلا فضائی حملہ کیا تھا۔

واضح رہے کہ روس ، امریکا اور اردن نے گذشتہ سال جولائی میں شام کے جنوب میں باغیوں کے زیر قبضہ علاقوں کو غیر جنگی زون قرار دینے سے اتفاق کیا تھا۔اس کے بعد سے روس کے لڑاکا طیاروں نے باغیوں کے ٹھکانوں پر حملے نہیں کیے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں