ماہر سعودی پیانو نواز خاتون نے دلفریب دھنوں سے حاضرین کے دلوں کے تار چھیڑ دیئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ریاض کے کنگ فہد کلچرل سینٹر میں منعقد ایک شو میں پیانو کے تار چھیڑ کر سعودی خاتون ایمان قستی نے حاضرین کی توجہ اپنی جانب مبذول کروا لی۔ ہفتے کے روز ہونے والے اس ایونٹ کا افتتاح ایمان نے اپنے فن کے مظاہرے کے ساتھ کیا جب کہ ایونٹ کا اختتام سنگاپور سے تعلق رکھنے والی عالمی شہرت یافتہ وائلن نواز Chloe Chua کی شرکت کے ساتھ ہوا۔

ایمان قستی نے العربیہ ڈاٹ نیٹ سے خصوصی گفتگو میں بتایا کہ انہوں نے شو میں موسیقی کی پانچ مختلف دُھنیں پیش کیں اور سیکڑوں کی تعداد میں موجود حاضرین سے بھرپور داد حاصل کی۔

ایمان کا مزید کہنا ہے کہ "سعودی کلچرل اتھارٹی نے میرے اندر اعتماد پیدا کرنے اور میرے شوق کو جلا بخشنے میں ایک بڑا کردار ادا کیا۔ میں نے پانچ برس کی عمر سے اپنی والدہ کے ہاتھوں پیانو بجانے کی تربیت حاصل کرنے کا سلسلہ شروع کیا"۔

ایمان کے مطابق وہ ابھی انگریزی ادب کے شعبے میں زیر تعلیم ہیں اور خود کو فن کی دنیا میں پیانو بجانے والی ماہر کے طور پر ثابت کرنے کی خواہش رکھتی ہیں۔ اس سلسلے میں وہ عالمی سطح پر اپنے فن کا مظاہرہ کرنا چاہتی ہیں۔

ریاض میں ہونے والے مذکورہ شو کی جان دنیا کی کم عمر ترین وائلن نواز Chloe Chua تھی جس کی عمر 11 برس سے زیادہ نہیں ہے۔ شُوا نے بہترین فن کا مظاہرہ کیا جس نے حاضرین کو کھڑے ہو کر داد دینے پر مجبور کر دیا۔

شُوا کچھ عرصہ قبل جنیوا میں منعقد ہونے والےMenuhin عالمی مقابلے میں پہلی پوزیشن حاصل کر چکی ہے۔ یہ مقابلہ 22 برس سے کم عمر افراد کے لیے ہوتا ہے جس میں دنیا بھر سے وائلن نواز شرکت کرتے ہیں۔

سنگاپور کی اس بچّی نے Menuhin Competition کے تکنیکی سربراہ گورڈن بیک کے ساتھ مل کر اپنے فن کا مظاہرہ کیا۔ گورڈن نے اس دوران پیانو پر دھن بجائی۔ اس موقع پر دونوں افراد نے اپنے کمالِ فن سے حاضرین کو گرما دیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں