.

سوڈان کے استحکام کے لیے ہر ممکن مدد دینے کو تیار ہیں: متحدہ عرب امارات

سوڈانی قوم کے حوالے سے اماراتی موقف پر جنرل البرہان کا ابو ظبی سے اظہار تشکر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات کے ولی عہد اور مسلح افواج کے ڈپٹی چیف الشیخ محمدبن زاید آل نہیان نے کہا ہے کہ ان کا ملک سوڈان میں استحکام کے لیے ہر ممکن مدد دے گا۔

انھوں نے کہا کہ برادر ملک سوڈان جس تبدیلی اور حالات سے گزر رہا ہے، ان میں ان میں ابو ظبی خرطوم کے ساتھ ہے۔ سوڈان کی تعمیرو ترقی، خوشحالی اور استحکام کے لیے ہر ممکن مدد کی جائے گی۔ انہوں‌ نے مزید کہا کہ ابو ظبی سوڈان میں پرامن سیاسی انتقال اقتدار اور تمام سیاسی قوتوں کی حمایت سے ملک میں تبدیلی کےعمل کو آگے بڑھانے کا حامی ہے۔

اماراتی ولی عہد نے ان خیالات کا اظہار سوڈان کی عبوری عسکری کونسل کے سربراہ لیفٹیننٹ جنرل عبدالفتاح البرہان سے اتوار کو ملاقات میں کیا۔

دونوں رہ نماؤں کے درمیان ملاقات میں اماراتی ولی عہد نے اس یقین کا اظہار کیا کہ سوڈان جلد موجودہ بحران سے نکلنے میں کامیاب ہو جائے گا اور اس کے تمام ادارے کامیابی کے ساتھ اس بحران سے نکلنے کے بعد استحکام کی منازل طے کریں گے۔ متحدہ عرب امارات اور دوسرے ممالک سوڈان کےاستحکام کے لیے ہر ممکن مدد دیں گے۔

اس موقع جنرل عبدالفتاح عبدالرحمان البرہان نے امارات کی طرف سے خرطوم کی ہرممکن مدد اور حمایت پر ابو ظبی کا شکریہ ادا کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ سوڈان تبدیلی کے عمل سے جلد نکل آئے گا۔

خیال رہے کہ سوڈان کی عبوری عسکری کونسل کے سربراہ جنرل عبدالفتاح البرہان مشرق وسطیٰ کے ممالک کے دورے پر ہیں۔ دو روز قبل انھوں‌ نے مصر کا دورہ کیا جہاں انہوں نے مصری صدر عبدالفتاح السیسی سےملاقات کی تھی۔ اتوار کو انہوں‌ نے متحدہ عرب امارات کی قیادت کےساتھ ابو ظبی میں‌ ملاقات کی۔