لیبیا : الوطیہ فوجی اڈے پر حملہ پسپا ، وفاق کی فورسز کے 40 ارکان ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

لیبیا کی قومی فوج نے منگل کے روز ایک اعلان میں بتایا کہ اس نے الوطیہ کے فوجی اڈے پر وفاق حکومت کی ملیشیاؤں کا حملہ ناکام بنا دیا۔

لیبیا کی فوج کے زیر انتظام میڈیا کے مطابق منگل کو علی الصبح دارالحکومت طرابلس کے مغرب میں واقع الوطیہ فوجی اڈے پر اس حملے میں وفاق کی ملیشیاؤں کو ترکی کی فضائی معاونت بھی حاصل تھی۔

لیبیا کی فوج کے مسلح یونٹوں نے حملے کی کوششوں کو پسپا کر دیا۔ اس دوران وفاق کی ملیشیاؤں کے 40 ارکان ہلاک اور درجنوں زخمی ہو گئے۔ ان کے علاوہ متعدد عناصر کو قیدی بنا لیا گیا۔

واضح رہے کہ لیبیا کی مسلح افواج کی جنرل کمان نے فیس بک پر اپنے پیج پر ایہ اعلان کیا تھا کہ مذکورہ حملے کو ناکام بنانے کے دوران متعدد فوجی اہل کار بھی اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے۔

یاد رہے کہ الوطیہ کے فوجی اڈے کو انتہائی اہمیت حاصل ہے۔ الوطیہ کے فوجی اڈے کا سابقہ نام عقبہ بن نافع فوجی اڈہ تھا۔ یہ العجیلات کے جنوب میں واقع ہے اور انتظامی طور پر لیبیا کے مغربی علاقے الجمیل کے تحت آتا ہے۔ اس کے ذریعے نہ صرف طرابلس بلکہ لیبیا بھر میں عسکری اہداف کے خلاف فضائی کارروائیاں کی جا سکتی ہیں۔

الوطیہ کا فوجی اڈہ 7 ہزار فوجی اہل کاروں کی گنجائش رکھتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں