.

سعودی عرب: العُلا روئل کمیشن نے جنگلی جانوروں کا تیسرا مجموعہ چھوڑ دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں 'رائل کمیشن فار العُلا' نے اتوار کے روز جنگلی جانوروں کے تیسرے مجموعے کو الحجر شہر کے اندر ان کے قدرتی ماحول میں چھوڑ دیا۔ یہ مملکت کا پہلا مقام ہے جو عالمی ورثے سے متعلق یونیسکو کی فہرست میں شامل ہوا۔

رائل کمیشن فار العُلا نے جنگلی حیات کی بہبود کے قومی مرکز کے تعاون سے تیسرے مجموعے کے ضمن میں ریم نسل کے 25 ہرن، 10 نیوبی پہاڑی بکرے اور 8 عربی غزال (سیدھے سینگوں والا ہرن) چھوڑے۔ اس کا مقصد معدومیت کے خطرے سے دوچار جانوروں کی اقسام کو بچانا ہے۔

اس تازہ ترین پیش رفت سے جنگلی حیات کے تحفظ میں مدد ملے گی۔ رائل کمیشن فار العُلا اس سلسلے میں مقامی آبادی کے ساتھ مل کر ٹھوس منصوبوں پر عمل پیرا ہے۔ اس حوالے سے جانوروں کا پہلا مجموعہ فروری 2019ء میں چھوڑا گیا تھا۔

رائل کمیشن فار العُلا کے سربراہ شہزادہ بدر بن عبداللہ بن فرحان کا کہنا ہے کہ "یہ منصوبہ اپنی نوعیت کا منفرد منصوبہ ہے۔ اس کے تحت الحجر میں جانوروں کو ان کے قدرتی ماحول میں چھوڑا جائے گا۔ الحجر پہلا مقام ہے جس کا عالمی ورثے سے متعلق یونیسکو کی فہرست میں اندراج ہوا۔ اس مقام پر ان جانوروں کی میزبانی کا ماحول فراہم کیا گیا ہے جو معدومیت کے خطرے سے دوچار ہیں"۔

جانوروں کو چھوڑے جانے کے لیے 1.5مربع کلو میٹر کا رقبہ مختص کیا گیا ہے۔