سعودی خاتون مشاعل انٹرنیشنل آسٹروناٹیکل فیڈریشن کی نائب صدر بن گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

انٹرنیشنل ایسٹروناٹیکل فیڈریشن نے اعلان کیا ہے کہ سعودی عرب کی نمائندگی کرنے والی انجینئر مشاعل الشميمري نے آئی اے ایف کا نائب صدر بنا دیا گیا ہے۔

مشاعل الشميمري دنیا کے سب سے بڑے عالمی خلائی ادارے کے نائب صدر کے عہدے پر پہنچنے والی پہلی سعودی خاتون ہیں۔ انہوں نے اس عہدہ کو حاصل کرنے کیلئے اپنے مد مقابل 14 امیدواروں سے زیادہ ووٹ حاصل کئے۔

انہوں نے عالمی سطح پر خلائی شعبے کی ترقی کے لیے اپنے بہتر وژن اور بین الاقوامی خلابازی فیڈریشن کی سمتوں کی ترقی میں اپنے تعاون کی وجہ سے فیڈریشن کے اراکین کے ووٹ حاصل کیے ہیں۔

یہ قابل ذکر ہے کہ بین الاقوامی خلابازی فیڈریشن ۔ آئی اے ایف‘‘ کے دفتر میں 12 نائب صدور شامل ہیں۔

کئی کام

یہ فیڈریشن کئی کام انجام دیتی ہے بالخصوص یونین کے اجلاسوں کے انتظامات، ان کی نگرانی، جنرل اسمبلی کے اجلاسوں کا ایجنڈا تیار کرنا اور اس کی سالانہ مالیاتی رپورٹ کی تیاری فیڈریس کی اہم خدمات میں شامل ہیں۔

فیڈریشن عارضی کمیٹیوں کی تقرری اور رکنیت کے خاتمے پر غور کرنے کے لیے جنرل اسمبلی کو سفارش بھی کرتی ہے۔ فیڈریشن مختف تنظیموں، انجمنوں اور اداروں کے ساتھ تعاون بڑھاتی ہے۔ مختلف ممالک کے 400 سے زیادہ افراد فیڈریشن کے رکن ہیں۔

ماہرین کا پلیٹ فارم

فیڈریشن کے بین الاقوامی اکیڈمی آف ایسٹروناٹکس اور بین الاقوامی انسٹی ٹیوٹ فار سپیس لا کے ساتھ بھی قریبی تعلقات ہیں۔ فیڈریشن خلائی ایجنسیوں اور تحقیق کے ماہرین کے لیے ایک پلیٹ فارم مہیا کرتی ہے تاکہ علم کا تبادلہ اور انعامات کی شکل میں ملنے والی کامیابیوں کو ایک دوسرے کے ساتھ شیئر کیا جا سکے۔ یہ انعامات ہر سال مختلف افراد اور گروہوں کو پیش کئے جاتے ہیں۔ فیڈریشن اپنی افرادی قوت اور سرگرمیوں کے ذریعہ طلبہ اور نوجوان پیشہ ور افراد کیلئے معاون ثابت ہوتی ہے۔ اپنی اشاعتوں کے ذریعہ دنیا بھر کی خلائی سرگرمیوں سے متعلق عوامی شوق کو بڑھانے میں بھی مدد کرتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں