لانچ کے لیے تیار متعدد راکٹ اور لانچر قبضہ میں لے لیے ہیں: لبنان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

لبنانی فوج نے ہفتہ کے روز اعلان کیا ہے کہ اس نے میزائل لانچر اور لانچ کے لیے تیار متعدد راکٹ قبضہ میں لے لیے ہیں۔ انہیں ناکارہ بنانے کی کوشش کی جارہی ہے۔

فوج نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر ایک بیان میں بتایا کہ "فوج کے ایک یونٹ کو میزائل لانچر اور متعدد میزائل ملے جو چند روز قبل لانچ کرنے کے لیے تیار کیے گئے تھے۔ اور انہیں ناکارہ بنانے کے لیے کام جاری ہے۔‘‘

جمعرات کے روز بھی لبنانی فوج نے اعلان کیا تھا کہ اسیے صور ضلع کے قصبوں زبقین اور القلیلہ کے آس پاس داغے جانے کے لیے تیار متعدد راکٹ ملے جنہیں ناکارہ بنا دیا گیا۔

واضح رہے جمعرات کو لبنان سے شمالی اسرائیل کی طرف راکٹوں کا پورا برسٹ فائر کیا گیا تھا۔ جواب میں اسرائیلی فوج نے جنوبی لبنان کے متعدد قصبوں پر توپ خانے سے شدید گولہ باری کی تھی ۔ اسرائیل نے غزہ کی پٹی پر بھی فضائی بمباری شروع کردی تھی۔

لبنان کی وزارت خارجہ نے ہفتہ کو کہا کہ لبنان کی طرف سے سلامتی کونسل میں جمع کرائی گئی شکایت میں اسرائیل کو کسی بھی طرح کی کشیدگی کے اثرات کا ذمہ دار ٹھہرایا گیا ہے۔

لبنانی وزارت خارجہ نے ایک بیان میں مزید کہا ہے کہ بیروت سے کی گئی شکایت میں اسے خطے کی حالیہ پیش رفت بالخصوص جنوبی لبنان میں موجود دیہاتوں کی سنگینی سے خبردار کیا گیا ہے۔

لبنان نے اپنی سرزمین کو عدم استحکام کے لیے پلیٹ فارم کے طور پر استعمال کرنے دینے سے بھی انکار کردیا ہے۔ لبنان نے باور کرایا ہے کہ لبنان کے پاس اپنے دفاع کا جائز حق موجود ہے۔ بیروت نے اس بات کی تصدیق کی کہ اقوام متحدہ اور اقوام متحدہ کے مشن فورسز (UNIFIL) کے ساتھ رابطوں کو کھلا رکھنا مسائل کو حل کرنے اور استحکام کو برقرار رکھنے کا بہترین طریقہ ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں