اسرائیلی فوج نے مغربی کنارے میں جنین کیمپ پر دھاوا بول دیا، 4 فلسطینی زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی فورسز نے منگل کے روز مغربی کنارے میں جنین پناہ گزین کیمپ پر دھاوا بول دیا اور فائرنگ کر کے چار فلسطینیوں کو زخمی اور چار کو گرفتار کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق اسرائیلی اسپیشل فورس نے جنین کیمپ میں الھدف محلے میں ان کے گھر پر دھاوا بولا اور ان کے چار بیٹوں کو فیلڈ تفتیش کے بعد گرفتار کر لیا۔ گرفتاری کے بعد ان نوجوانوں کی فیلڈ شناخت پریڈ کی گئی۔

دوسری طرف اسرائیلی براڈکاسٹنگ کارپوریشن نے کہا ہے کہ ایک خصوصی فورس نے جنین میں ایک فلسطینی کو اسرائیلی اہداف پر گولی چلانے کے الزام میں گرفتار کیا ہے، لیکن الاسمر نے اس بات کی تردید کی کہ اس کا ایک بیٹا اسرائیلی فوج کو کسی سکیورٹی مطلوب تھا۔ انہوں نے اس بات کی تصدیق کی کہ اس کا بیٹا فلسطینی پولیس میں کام کرتا ہے۔

اس سے قبل ملنے والی اطلاعات کے مطابق اسرائیلی فورسز نے جنین شہر اور اس کے کیمپ پر دھاوا بول دیا۔ چھاپہ ایک خصوصی فورس کے داخلے کے ساتھ شروع ہوا، جس کے بعد فوج کی بڑی تعداد اندر داخل ہوئی۔

عینی شاہدین نے بتایا کہ اسپیشل فورس ایک گھر میں داخل ہوئی، جب کہ اسپیشل فورس کو تحفظ فراہم کرنے کے لیے بڑی فورس شہر میں پہنچی جو "بھیس بدل کر" داخل ہوئی۔

مقامی ذرائع نے عرب ورلڈ نیوز ایجنسی کو بتایا کہ اسرائیلی فورسز نے الخلیل میں عروب پناہ گزین کیمپ پر بھی دھاوا بول دیا اور ایک فلسطینیوں پر براہ راست گولیاں برسائیں۔

قبل ازیں فلسطینی نیوز اینڈ انفارمیشن ایجنسی نے اطلاع دی تھی کہ اریحا میں عقبہ جبر کیمپ پر فورسز کے چھاپے کے دوران ایک نوجوان اسرائیلی فورسز کی گولی لگنے سے جاں بحق ور درجنوں دیگر افراد آنسو گیس کی شیلنگ سے زخمی ہو گئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں