سعودی عرب میں موسم گرماں اختتام کے قریب، سردیاں سر پرآپہنچیں:ماہرین فلکیات

جنوبی کرے کے باسی بہار کی آمد کے منتظر،شمال والوں کویخ بستہ راتوں کی نوید ہو

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب میں جدہ میں فلکیاتی سوسائٹی نے کہا ہے کہ ستمبر کے مہینے میں شمالی نصف کرہ میں موسم گرما ختم ہوجائے گا اور جلدی رات شروع ہو جائے گی۔ خاص طور پر مہینے کے آخر میں سیاروں مشتری اور زحل کے شام کے آسمان پر واپس آنے کے ساتھ ہی تقریبا رات کا وقت ہوجاتا ہے۔ جنوبی نصف کرہ میں رہنے والوں کے لیے رات نسبتا چھوٹی ہوجائے گی اور سردیوں کے ختم ہوتے ہی فرش گرم ہو جاتا ہے۔

جدہ میں فلکیاتی سوسائٹی کے سربراہ انجینیر ماجد ابو زاہرہ نے کہا کہ خزاں کا موسم شمالی نصف کرہ میں ختم اور سردیوں کا آغاز ہوتا ہے جب کہ جنوبی نصف کرہ میں بہار 22 یا 23 ستمبرموسم بہار کا آغاز ہوتا ہے۔ آپ کرہ زمین کے کس حصے میں رہتے ہیں اس کے موسم کا انحصار اس شمالی یا جنوبی پر ہوگا۔ بیس ستمبر کے آگے پیچھے شمالی اور جنوبی نصف کرہ میں تقریباً مساوی مقدار میں روشنی ہوتی ہے۔ دن اور رات کا دورانیہ تقریبا مساوی ہوتا ہے

انہوں نے مزید کہا کہ چاند 29 ستمبر کو مکمل ہو جائے گا اورنئے مہینے کے چاند میں داخل ہوگا۔ کیونکہ یہ موسم خزاں کے ایکوینوکس کے دس دنوں کے اندر ہوتا ہے۔ شمالی نصف کرہ میں موسم گرما کے سیارچے اب بھی شام کے اوائل کے آسمان میں نظر آتے ہیں۔ سیارہ زحل کو اپنی اوسط چمک کے ساتھ دیکھا جاسکتا ہے۔ یہ جنوب مشرقی افق پر دیکھا جاتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں