اسرائیلی بربریت سے لاشوں کے خوفناک مناظردیکھ کر امدادی کارکن پھوٹ پھوٹ پر رو پڑا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی میں اسرائیلی فوج کی طرف سے ڈھائی جانے والی قیامت اور بربریت کے مناظر دیکھنا بھی مشکل ہو رہا ہے۔

ایک فلسطینی ایمبولینس ڈرائیور لاشوں کا انبار دیکھ کر اپنے جذبات پر قابو نہ رکھ سکا اور پھوٹ پھوٹ کر رونے لگا۔

یہ واقعہ غزہ کی پٹی میں اسرائیلی فوج کی رعونت اور جنگی جنون کا منہ بولتا ثبوت ہے۔

غزہ میں وزارت صحت نے کہا کہ ہفتے کے روز سے محصور پٹی پر اسرائیلی فضائی حملوں میں کم از کم 900 فلسطینی شہید اور تقریباً 4,600 دیگر زخمی ہوئے ہیں۔

"کوئی جگہ محفوظ نہیں"

غزہ کے رہائشیوں نے سوشل میڈیا پر مدد کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ کئی عمارتیں منہدم ہوئیں۔ بعض میں پچاس پچاس افراد اندر پھنسے ہیں۔ امدادی کارکن ان تک پہنچنے میں ناکام ہیں۔

اقوام متحدہ نے کہا ہے کہ غزہ کے ایک لاکھ 80 ہزار بے گھر لوگوں کو عارضی پناہ گاہوں اور اسکولوں میں پناہ دی گئی ہے۔

فلسطینی وزارت خارجہ نے کہا کہ ہفتے کے روز سےاسرائیلی حملوں میں 22,600 سے زائد رہائشی یونٹس اور دس ہسپتال تباہ ہو چکے ہیں۔ اسرئیلی بمباری میں 48 سکولوں کو نقصان پہنچا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں