غزہ میں حماس کے خلاف اسرائیل کی زمینی فوجی کارروائیوں کے سیٹیلائٹ مناظر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

زمینی کارروائیوں میں توسیع اور غزہ کی پٹی میں اسرائیلی حملوں میں شدت کے ساتھ سیٹلائٹ تصاویر نے کارروائیوں کی قطعی تفصیلات کا انکشاف کیا ہے۔

سینکڑوں فوجی گاڑیوں کی دراندازی

’نیویارک ٹائمز‘ کی رپورٹ کے مطابق کل سوموار کی صبح لی گئی سیٹلائٹ تصاویر میں شمالی غزہ میں اسرائیلی فوج کی پیش قدمی کو دکھایا گیا، جہاں سینکڑوں بکتر بند گاڑیاں سرحد پار سے غزہ شہر کے مضافات میں شہری علاقوں میں داخل ہوئیں۔

اسرائیل ابھی تک اس تیز رفتار اور زبردست زمینی حملے کے مقام تک نہیں پہنچا ہے جس کی بہت سے تجزیہ کاروں نے توقع کی تھی، لیکن کمرشل سیٹلائٹ کمپنی پلانیٹ لیبز کی طرف سے لی گئی سیٹلائٹ تصاویر میں ایک بڑی حملہ آور قوت کو دکھایا گیا ہے جس میں درجنوں بکتر بند گاڑیوں کے متعدد گروپس کھلے میدانوں کو عبور کرکے شہری علاقوں میں جمع ہو رہے ہیں۔

یہ تصاویر اس حد تک واضح کرتی ہیں کہ اسرائیلی حملے کے لیے فوج کی اہم لائن غزہ میں کس حد تک منتقل ہوئی ہے اور اس سے ہونے والی تباہی کس حد تک ہے۔

جنوبی کراما محلے کی طرف پیش قدمی

اس دوران غزہ شہر کے شمال میں کراما محلے کے جنوب میں اسرائیلی گاڑیاں دیکھی گئیں۔ اس سے قبل اسرائیلی فوج کی طرف سے شائع ہونے والی ویڈیوز میں سرحدی علاقے کے قریب ٹینکوں کی لائنیں چلتی دکھائی دے رہی تھیں۔

کئی قریبی عمارتوں کو فضائی حملوں سے شدید نقصان پہنچا یا مکمل طور پر تباہ ہوگئیں۔ فضائی حملوں اور گولہ باری کی وجہ سے سینکڑوں گڑھے دیکھے جا سکتے ہیں۔ گھروں، سڑکوں رہائشی عمارتوں کی تباہی دیکھی جا سکتی ہے۔

ٹینک 3 سمتوں میں گئے

تصویر میں دکھایا گیا علاقہ ان تین سمتوں میں سے ایک ہے جس میں اسرائیلی ٹینک اور دیگر گاڑیاں غزہ کے سب سے بڑے شہر غزہ سٹی کی طرف چلی گئیں۔

غزہ کی پٹی کے شمال سے جنوب تک پھیلی مرکزی سڑک کے ساتھ ساتھ پٹی کے شمال مشرقی کونے میں بیت حانون قصبے میں بھی بکتر بند گاڑیوں کی قطاریں دیکھی گئیں۔

لیکن اسرائیلی افواج سب سے بڑے شہر غزہ میں براہ راست لڑائی سے پیچھے ہٹ گئیں۔

کھیتوں اور عمارتوں کی تباہی

کراما کے علاقے میں گذشتہ نو دنوں کے دوران کھیتوں اور عمارتوں کو بلڈوز کیا گیا ہے۔

تباہ شدہ کھیتوں میں گاڑیاں کا ھجوم

دریں اثناء تباہ شدہ کھیتوں کو درجنوں بکتر بند گاڑیوں کو جمع کرنے کے لیے استعمال کیا گیا، خاص طور پر ٹینک کی چوڑی پٹریوں سے اندازہ ہوتا ہے کہ وہ پورے علاقے میں کیسے منتقل ہوئے۔

تباہ شدہ عمارتوں کا ایک سلسلہ

جنوب میں تصاویر میں تباہ شدہ عمارتوں کا ایک سلسلہ دکھایا گیا ہے، ساتھ ہی اضافی گڑھے اور فوجی گاڑیاں بھی دیکھی جا سکتی ہیں۔

حماس کی وزارت صحت کے مطابق، 7 اکتوبر کو حماس کے حملے کے جواب میں اسرائیل کی جانب سے جوابی فضائی حملے شروع کرنے کے بعد سے غزہ میں 8000 سے زائد افراد مارے جا چکے ہیں جن میں سے اکثر بچے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں