فلسطین اسرائیل تنازع

جنگ کے بعد غزہ پرحکومت کے حوالے سے مشورے کے لیے اسرائیلی وزیرکی امریکا آمد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

دو اسرائیلی اور ایک امریکی حکام نے انکشاف کیا ہے کہ اسرائیلی وزیر سٹریٹجک امور رون ڈرمر آج منگل کو واشنگٹن پہنچیں گے جہاں وہ وائٹ ہاؤس اور سٹیٹ ڈیپارٹمنٹ میں اسرائیل کے غزہ میں جاری جنگ کی شدت کو کم کرنے کے بارے میں بات کریں گے۔

ایک سینیرامریکی اہلکار نے وضاحت کی کہ بائیڈن انتظامیہ اور نیتن یاہو حکومت کے درمیان بات چیت کے لیے اہم مسئلہ یہ ہے کہ "جنگ کے معاملات کو کیسے اور کس وقت میں ختم کیا جائے"۔

’ایکسیس‘ ویب سائٹ کے مطابق سینیر اسرائیلی اہلکار نے مزید کہا کہ ڈرمر وائٹ ہاؤس کے قومی سلامتی کے مشیر جیک سلیوان، سیکریٹری آف اسٹیٹ ٹونی بلنکن اور کانگریس کے اراکین سے بھی ملاقات کریں گے۔

غزہ کون حکومت کرے گا؟

انہوں نے وضاحت کی کہ ڈرمر سے غزہ میں جنگ کے اگلے کم شدت والے مرحلے کے لیے اسرائیل کے منصوبوں پر بات چیت کی توقع ہے۔ امکان ہے کہ امریکی حکام کے مشورے سے اسرائیل غزہ کی پٹی میں جنوری کے اوائل میں حملوں کی شدت کم کردے گا۔ اس کے علاوہ اسرائیلی وزیر غزہ میں حماس کی حکومت کے خاتمے کے بعد کے منظرنامے اور عبوری سیٹ اپ بات کریں گے۔

اہلکار نے کہا کہ ڈرمر نیتن یاہو کے خیالات اور منصوبوں پر بھی بات کریں گے کہ جنگ کے ختم ہونے پر غزہ میں کیا ہوتا ہے اور اس کے بعد غزہ پر کس کی حکومت ہوگی۔

بائیڈن انتظامیہ نے عوامی سطح پر کہا تھا کہ وہ چاہتی ہے کہ فلسطینی اتھارٹی کو حماس کے بعد کی حقیقت میں غزہ پر حکومت کرنے میں کردار ادا کرنا چاہیے، لیکن امریکی اہلکار نے انکشاف کیا کہ نیتن یاہو نے پہلے اس خیال کو مسترد کر دیا تھا، لیکن حالیہ ہفتوں میں ڈرمر اور دیگر اسرائیلی حکام نے اس سے بات کرنا شروع کر دی۔

امریکی عہدیدارنے بتایا کہ وزارت دفاع کے پالیسی آفیسر ڈرور شالوم کی سربراہی میں ایک اسرائیلی وفد نے جنگ کے اگلے کے بعد کے مرحلے میں بات چیت کرنے کے لیے گذشتہ ہفتے واشنگٹن کا دورہ کیا۔

اسرائیلی گولہ بارود کا ذخیرہ

دریں اثناء اسرائیلی اہلکار نے کہا کہ ڈرمر سے اسرائیل کے گولہ بارود کے ذخیرے کے بارے میں خدشات اور اسلحے کی ترسیل میں تیزی لانے کے امریکا کے مطالبے پر بھی بات کرنے کی توقع ہے۔

اسرائیلی اور امریکی حکام نے بتایا کہ اسرائیلی وزیر دفاع یوآو گیلنٹ نے گذشتہ ہفتے بلنکن سے بات کی اور جنگی سازوسامان کی فراہمی میں تاخیر پر اپنی تشویش کا اظہار کیا تھا۔

غزہ پر اسرائیلی بمباری کا منظر
غزہ پر اسرائیلی بمباری کا منظر

گیلنٹ نے پوچھا کہ کیا اس میں رکاوٹ سیاسی قیادت کا فیصلہ ہے مگر لیکن بلنکن نے انہیں یقین دلایا کہ ایسا نہیں ہے۔ دو امریکی عہدیداروں نے کہا کہ اسرائیل کو جنگی سازوسامان کی ترسیل کو سست کرنے کا کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا ہے۔

اسرائیلی وزیر اعظم بنجمن نیتن یاہو کے بہت قریب رہنے والے ڈرمر کی یہ ملاقاتیں ایسے وقت میں ہو رہی ہیں بائیڈن انتظامیہ اور اسرائیلی حکومت کے درمیان غزہ جنگ کے طریقہ کار پر تناؤ پایا جاتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں