سعودی عرب:سول ایوی ایشن کے شعبے میں غیرمعمولی ترقی اوروسعت کےلیے نئےاقدامات کی تیاری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کی سول ایوی ایشن سے متعلق اتھارٹی (جی اے سی اے) نے منصوبہ بنایا ہے کہ 2024 کے دوران ایوی ایشن کے شعبے میں انقلابی منصوبوں کا آغاز کرے گی۔ یہ بات سعودی پریس ایجنسی (ایس پی اے) نے اتوار کے روز رپورٹ کی ہے۔

سعودی ایوی ایشن اتھارٹی کے اس نئے منصوبے کا باضابطہ آغاز کرنے کے لیے 20 اور 22 مئی کے درمیان تقریبات کا انعقاد ہوگا۔ شاہ سلمان بن عبدالعزیز اس سارے منصوبے کی سرپرستی کر رہے ہیں اور بتایا گیا ہے ان اقدامات کے نتیجے میں سعودی ایوی ایشن انڈسٹری کو غیر معمولی ترقی ملنے کا امکان ہے۔

ایوی ایشن کے اس منصوبہ کی بنیادی تھیم عالمی سطح پر رابطوں کو بڑھانا ہے۔ سعودی ایوی ایشن نے اس سلسلے میں اپنے بنیادی منصوبہ کا آغاز کرتے ہوئے توقع کی ہے کہ سعودی جی ڈی پی میں 2030 تک ایوی ایشن کا حصہ 2 ارب ڈالر تک چلا جائے گا۔

اس سلسلے میں مملکت کے احساسات اور ارادوں کو اجاگر کرتے ہوئے کہا گیا ہے 'ایوی ایشن کے شعبے میں ترقی کی اہم ترین منزل اس شعبے میں تجارت کا فروغ اور سعودی عرب میں سیاحت کو بڑھاوا دینا ہے۔

مملکت نے 2023 اکتوبر کے دوران اپنے سیاحتی اہداف کو بڑھاتے ہوئے 2030 تک کے لیے غیر ملکی سیاحوں کی تعداد 100 ملین سے 150 ملین کر دی تھی۔

سعودی خبر رساں ایجنسی کے مطابق ایوی ایشن اتھارٹی کے صدر عبدالعزیز الدوئیلج نے کہا ہے 'اس سلسلے میں بنایا گیا روڈ میپ ترقی کے بہت سے زینے طے کرنے میں اہم کردار ادا کرے گا۔ اس منصوبے کے تحت ایوی ایشن کے انفراسٹرکچر کو ترقی دے جائے گی، اس کی ریگولیٹری صلاحیتوں اور اہلیتوں کو مزید بڑھاوا ملے گا اور خدمات کے شعبے میں بھی بہتری لائی جائے گی۔'

توقع ظاہر کی گئی ہے کہ آئندہ دنوں دنیا بھر سے ایوی ایشن سے وابستہ حکام، شخصیات اور ماہرین پانچ ہزار کی تعداد سعودی عرب پہنچیں گے۔ ان سب کا تعلق 100 مختلف ملکوں سے ہوگا اور یہ مملکت سعودی عرب میں ایوی ایشن کی ترقی اور مستقبل کے اہداف پر تبادلہ خیال کریں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں