.

امریکی ڈرون حملہ: پاکستانی طالبان کے سربراہ حکیم اللہ محسود ہلاک

شمالی وزیرستان میں طالبان کے اہم اجلاس کے بعد میزائل حملے میں گاڑی تباہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان کے وفاق کے زیر انتظام قبائلی علاقے شمالی وزیرستان میں امریکا کے بغیر پائیلٹ جاسوس طیارے کے میزائل حملے میں کالعدم تحریک طالبان کے سربراہ حکیم اللہ محسود سمیت پانچ جنگجو مارے گئے ہیں۔

ذرائع کے مطابق شمال وزیرستان کے علاقے ڈنڈے درپہ خیل میں واقع پاکستانی طالبان کے ٹھکانے پر جمعہ کی شام امریکی ڈرون نے دو میزائل فائر کیے ہیں جس سے پوری عمارت تباہ ہوگئی۔ اس وقت کالعدم تحریک طالبان پاکستان (ٹی ٹی پی) کا اہم اجلاس جاری تھا۔ پاکستان کے انٹیلی جنس حکام نے حملے میں حکیم اللہ محسود کی ہلاکت کی تصدیق کر دی ہے۔

انٹیلی جنس اہلکاروں نے اپنے سینیّر حکام کو اطلاع دی ہے کہ حکیم اللہ محسود ڈنڈے درپہ خیل میں ایک مسجد میں اجلاس کے بعد واپس جا رہے تھے کہ اس دوران ان کی گاڑی پر امریکی ڈرون نے میزائل فائر کر دیا۔ اس حملے کے بعد بھی امریکی ڈرون کو علاقے میں پرواز کرتے ہوئے دیکھا گیا ہے۔

پاکستانی حکومت یا طالبان نے ابھی تک حکیم اللہ محسود کی ہلاکت کی تصدیق نہیں کی ہے۔ واضح رہے کہ پہلے بھی متعدد مرتبہ ان کی ہلاکت کی اطلاعات سامنے آ چکی ہیں لیکن وہ کچھ عرصہ روپوش رہنے کے بعد پھر منظرعام پر آ جاتے تھے لیکن اس مرتبہ متعدد انٹیلی جنس حکام اور عسکری ذرائع نے ان کی ہلاکت کی تصدیق کی ہے۔

مختلف ذرائع نے ڈرون حملے میں ٹی ٹی پی کے سربراہ حکیم اللہ محسود کے ذاتی محافظ طارق محسود اور قریبی ساتھی عبداللہ بہار محسود کی ہلاکت کی بھی تصدیق کی ہے۔ فوری طور پر باقی دو جنگجو کمانڈروں کی شناخت معلوم نہیں ہو سکی۔

درایں اثناء وزیر داخلہ چودھری نثارعلی خان نے کہا ہے کہ وہ شمالی وزیرستان میں ڈرون حملے کے بارے میں رپورٹس حاصل کر رہے ہیں۔ انھوں نے ایک نجی ٹیلی ویژن چینل سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وہ فی الوقت حکیم اللہ محسود کی ہلاکت کی تصدیق نہیں کر سکتے۔

انھوں نے ڈرون حملوں کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ان کا مقصد پاکستان میں قیام امن کے لیے کی جانے والی کوششوں کو سبوتاژ کرنا ہے۔ انھوں نے بتایا کہ کل ہفتے کے روز طالبان سے بات چیت کے لیے ایک وفد بھیجا جانا تھا۔

ڈنڈے در پہ خیل کا علاقہ شمالی وزیرستان کے صدر مقام میران شاہ سے پانچ کلومیٹر شمال میں واقع ہے اور یہ پاکستانی طالبان کا مضبوط گڑھ سمجھا جاتا ہے۔امریکی ڈرون نے گذشتہ روز بھی میران شاہ کے نزدیک طالبان کے ایک ٹھکانے پرمیزائل حملہ کیا تھا جس میں تین جنگجو مارے گئے تھے۔