.

یوم پاکستان پریڈ میں سعودی، چینی اور ترک فوجی دستے شریک

سعودی فوجی دستے پہلی مرتبہ پاکستان ڈے کے پریڈ میں شامل ہوئے، بھرپور داد سمیٹی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یوم پاکستان کے موقع پر دارلحکومت اسلام آباد میں منعقد کی گئی مرکزی تقریب میں پاکستان فوج، فضائیہ اور بحریہ سمیت رینجرز اور پولیس نے پریڈ کا مظاہرہ کیا۔ امسال پہلی بار عالمی افواج کے دستوں نے بھی شرکت کی۔

پاکستان فوج کی جانب سے منعقد کی گئی روایتی پریڈ کی تقریب میں پہلی بار چین اور ترکی کے فوجی قافلوں سمیت سعودی عرب کے قافلے نے بھی شرکت کی۔ فوجی پریڈ میں سعودی عرب اور چین کے چاک چوبند فوجی دستوں نے بھی سلامی دی۔ غیر ملکی افواج کی سلامی کے موقع پر متعلقہ ممالک کے اعلیٰ عسکری حکام بھی موجود تھے۔

سب سے پہلے سعودی عرب کے فوجی دستے نے سلامی دی، جس کے بعد چین کے فوجی بینڈ نے پرفارمنس کا مظاہرہ کیا، چینی قافلے میں بری وفضائی فوج کے اہلکار بھی شامل تھے۔ فوجی پریڈ میں چین اور سعودی عرب کی فوج کے اعلیٰ عہدیداروں نے بھی شرکت کی۔

تقریب میں ترکی کے فوجی بینڈ ’مہتر‘ نے بھی پرفارمنس کا مظاہرہ کیا، ترکی کے بینڈ نے اپنے روایتی لباس اور سازوں کے ساتھ سلامی دی۔ ترکی کے مہتر فوجی بینڈ کی بنیادی 1299 میں رکھی گئی تھی، اس بینڈ کا شمار دنیا کے قدیم ترین بینڈز میں ہوتا ہے۔ ترک بینڈ نے ’جیوے جیوے پاکستان‘ کی دھن پر پرفارمنس کی۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے صدر مملکت ممنون حسین نے کہا کہ پاکستان اپنے تمام ہمسایہ ممالک سے پر امن دوستانہ تعلقات چاہتا ہے، مگر بھارت کی جارحیت نے خطے کے امن کو داؤ پر لگا دیا۔

ممنون حسین نے کہا کہ پاکستان گزشتہ کئی سال سے دہشت گردی کے خلاف لڑ رہا ہے، پاک فوج اور عسکری و سیکیورٹی اداروں کی کوششوں سے امن کا قیام ممکن ہوا۔ صدر نے کہا کہ پاکستان معاشی ترقی کی جانب گامزن ہے، ہمارا مقصد علاقائی اور عالمی امن کو یقینی بنانا ہے۔

صدر مملکت نے یوم پاکستان کی تقریب میں شرکت پر چین، ترکی اور سعودی عرب کے فوجی دستوں کو خوش آمدید کہتے ہوئے کہا کہ دوست ممالک کی جانب سے فوجی دستوں کو بھیجنے پر ان کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔