.

پاکستان کے صدرعارف علوی اور وزیر دفاع پرویز خٹک کووِڈ-19 کا شکار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان کے صدر عارف علوی اور وزیر دفاع پرویز خٹک کرونا وائرس کا شکار ہو گئے ہیں۔

عارف علوی نے سوموار کو ایک ٹویٹ میں اپنا کووِڈ-19 کا ٹیسٹ مثبت آنے کی اطلاع دی ہے اور کہا ہے کہ انھوں نے ابھی کرونا وائرس کی ویکسین کا صرف ایک انجیکشن لگوایا ہے،دوسرا ایک ہفتے میں متوقع ہے۔دونوں انجیکشن لگوانے کے بعد جسم میں کووِڈ-19 سے بچاؤ کی قوتِ مدافعت پیدا ہوتی ہے۔

وہ مزید لکھتے ہیں کہ ’’مہربانی کر کے احتیاط جاری رکھیں۔‘‘ان کا اشارہ شہریوں کی جانب تھا۔

دریں اثناء وزیر دفاع پرویز خٹک کا بھی کووِڈ-19 کا ٹیسٹ مثبت آیا ہے۔صوبہ سندھ کے گورنر عمران اسماعیل نے ان کے کرونا وائرس کا شکار ہونے کی اطلاع دی ہے اور ان کی صحت یابی کی دعا کی ہے۔

صدر اور وزیر دفاع سے قبل گذشتہ ہفتے وزیر اعظم عمران خان اور ان کی اہلیہ خاتون اوّل بشریٰ بی بی کا بھی کرونا وائرس کا ٹیسٹ مثبت آیا تھا۔اس کے بعد وزیر اعظم نے اسلام آباد کے علاقے بنی گالا میں تنہائی اختیار کرلی تھی۔

وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر فیصل سلطان نے اتوار کو اطلاع دی تھی کہ ’’عمران خان بہت جلد کووِڈ-19 سے کلینکل طور پر صحت یاب ہو گئے ہیں۔انھیں یہ مشورہ دیا گیا ہے کہ وہ اپنا کام جاری رکھ سکتے ہیں اور آیندہ چند روز میں اپنے معمولات بحال کر سکتے ہیں۔‘‘

مگران کے اس اعلان سے قبل ہی عمران خان کی بعض حکومتی عہدے داروں سے اپنی قیام گاہ پر ملاقات کی ایک تصویر منظر عام پر آئی تھی۔اس پر انھیں سیاسی اور سماجی حلقوں نے تنقید کا نشانہ بنایا تھا اور کہا تھاکہ خود وزیراعظم ہی کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے عاید کردہ پابندیوں کی پاسداری نہیں کر رہے ہیں اور انھوں نے اپنا ٹیسٹ منفی آنے سے قبل ہی میل ملاقاتیں شروع کردی ہیں۔