پاکستانی کوہ پیما میاں بیوی نے نیپال میں دنیا کی آٹھویں بلند ترین چوٹی سر کرلی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

پاکستانی کوہ پیما میاں بیوی احمد عزیر اور انعم عزیر نے نیپال میں واقع ماؤنٹ مناسلو کو سر کرلیا ہے اور وہ دنیا کی اس آٹھویں بلند ترین چوٹی کو سرکرنے والے پہلے پاکستانی میاں بیوی بن گئے ہیں۔

نیپال کے کمرشل ایڈونچر آپریٹر سیون سمٹ ٹریکس نے ان کے چوٹی سرکرنے کی تصدیق کی ہے۔ماؤنٹ مناسلو دنیا کا آٹھواں بلند ترین پہاڑ ہے۔اس کی بلندی 8,163 میٹر ہے اور یہ نیپال کے مغربی وسطی حصے میں واقع ہے۔ پاکستانی کوہ پیما نائلہ کیانی، سرباز خان اور شہروز کاشف نے رواں ماہ کے اوائل میں یہ چوٹی سر کی تھی۔

سیون سمٹ ٹریکس نے سوشل میڈیا پلیٹ فارم ایکس پر لکھا کہ احمد اور انعم عزیر نے ، جو دونوں دو بچّوں کے والدین ہیں،اتوار کو پہاڑ کو سر کیا ہے۔کمپنی نے لکھا کہ احمد اور انعم عزیر کو مبارک باد، جنھوں نے آج صبح آٹھویں بلند ترین چوٹی ماؤنٹ مناسلو (8163 میٹر) کو کامیابی کے ساتھ سر کیا ہے۔

وہ یہ کارنامہ انجام دینے والاپہلا پاکستانی جوڑا ہیں۔کوہ پیما شہروز کاشف نے اس کارنامے پر جوڑے کو سوشل میڈیا پلیٹ فارم ایکس (سابق ٹویٹر) پر مبارک باد دی ہے اور لکھا:’’بیدار ہوتے وقت یہ کیا خوش کن خبر ہے! یہ واقعی ایک شاندار کامیابی ہے‘‘۔

یہ کوہ پیما جوڑا پاکستان کے مشرقی شہر لاہور میں رہتا ہے۔ کاشف نے بتایا کہ عزیر پیشے کے لحاظ سے بیرسٹر ہیں اور ان کی اہلیہ انعم فرانزک ڈاکٹر ہیں۔انھوں نے مزید بتایا کہ وہ دونوں میرے صارف ہیں اور انھوں نے میری رہنمائی میں ماضی میں منگلک سر(منگلی سر) (6،050 میٹر) اور ہسپر (5،246 میٹر) کی چوٹیوں کو بھی سر کیا ہے۔

منگلی سر اور ہسپر دونوں پہاڑ پاکستان کے شمالی علاقے گلگت بلتستان میں واقع ہیں۔

کاشف نے بتایا کہ اگرچہ ان دونوں میاں بیوی نے اپنا پہلا آٹھ ہزار میٹر بلند پہاڑ سرکیا ہے لیکن انھیں یقین ہے کہ وہ مستقبل میں مزید چوٹیاں سر کریں گے اور وہ تمام 14 (آٹھ ہزاربلند) چوٹیوں کو سر کرنے والا پہلا (پاکستانی) جوڑا ہوں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں