سعودی ولی عہد شہزادہ محمد سمیت عالمی رہنماؤں کی شہباز شریف کو مبارک باد

چینی رہنماوں کی سب سے پہلے مبارک باد کے بعد سعودی عرب، ترکیہ، ایران اور تاجکستان کے رہنماؤں نے تہنیتی پیغامات بھجوائے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

قومی اسمبلی سے وزیر اعظم منتخب ہونے کے بعد عالمی رہنماوں کی جانب سے انہیں مبارک باد دینے کا سلسلہ شروع ہو گیا ہے۔

چینی رہنماوں نے انہیں سب سے پہلے مبارک باد دی۔ صدر شی جن پنگ اور وزیر اعظم لی قیانگ نو منتخب وزیر اعظم شہباز شریف کو الگ الگ تہنیتی پیغامات ارسال کیے۔

سعودی ولی کی شہباز شریف کو مبارکباد

ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے بھی پاکستانی وزیر اعظم شہباز شریف کو حلف اٹھانے پر مبارکباد پیش کی ہے۔

سعودی پریس ایجنسی کے مطابق ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے وزیر اعظم شہباز شریف کو تہنیتی پیغام روانہ کیا ہے۔

ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے وزیر اعظم شہباز شریف کے لیے نیک تمناؤں کا اظہار کیا ہے اور پاکستان کے لیے ترقی و کامرانی کی امید ظاہر کی ہے۔

ترکی اور ایرانی صدور کے مبارک باد کے پیغامات

ترک میڈیا کے مطابق صدر رجب طیب ایردوآن نے شہباز شریف کو فون کرکے دوسری مرتبہ وزیر اعظم منتخب ہونے پر انہیں مبارک باد دی۔

ترک صدر نے پاکستان کو ترقی کی راہ پر گامزن کرنے کی شہباز شریف کی صلاحیت پر اعتماد کا بھی اظہار کیا۔

پاکستانی دفتر خارجہ کے ترجمان کے مطابق نو منتخب وزیر اعظم نے ترک صدر کا شکریہ ادا کیا اور دوطرفہ تعاون کو مزید فروغ دینے کا عزم ظاہر کیا۔

ایران کے صدر ابراہیم رئیسی اور وزیر خارجہ حسین امیر عبداللہیان نے بھی شہباز شریف کو مبارک باد پیش کی ہے۔

صدر ابراہیم رئیسی نے شہباز شریف کو دوسری مرتبہ وزیر اعظم منتخب ہونے پر مبارک باد پیش کرتے ہوئے امید ظاہر کی کہ پاکستان کی نئی حکومت ملک کی ترقی اور خوشحالی کے لیے اقدامات اٹھائے گی۔

ایرانی وزیر خارجہ حسین امیر عبداللہیان نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ایکس پر ایک بیان میں شہباز شریف کو مبارک باد پیش کرتے ہوئے کہا کہ "اسلامی جمہوریہ ایران اسلامی جمہوریہ پاکستان کے ساتھ تمام سطحوں پر باہمی تعلقات اور تعاون کو بڑھانے کا عزم کرتا ہے۔"

تاجکستان کے صدر نے شہباز شریف کو دوسری بار وزیراعظم منتخب ہونے پر مبارک باد دیتے ہوئے اپنے ملک کا دورہ کرنے کی دعوت دی۔

صدر امام علی رحمان نے کہا کہ "مجھے یقین ہے کہ مزید مشترکہ کوششوں کے ذریعے ہم لوگوں کے فائدے کے لیے اپنے ملکوں کی طویل مدتی شراکت داری کو مزید مضبوط کریں گے۔" انہوں نے ساتھ ہی تاجکستان اور پاکستان کے درمیان دوستانہ تعلقات، باہمی احترام اور اعتماد برقرار رکھنے پر بھی زور دیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں