آزاد کشمیر میں آٹے وبجلی کی قیمت میں بڑی کمی، وزیراعظم نے 23 ارب روپے کی منظوری دیدی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

آزاد کشمیر حکومت نے جموں و کشمیر جوائنٹ عوامی ایکشن کمیٹی کے مطالبات منظور کرتے ہوئے آٹے اور بجلی کی قیمتوں میں کمی کا نوٹیفیکیشن جاری کر دیا۔

حکومت آزاد کشمیر نے آٹے کی قیمت میں 1100 روپے من کم کرنے کی منظوری دے دی ہے جس کا نوٹیفیکیشن بھی جاری کر دیا گیا جبکہ بجلی کی قیمتوں میں بھی کمی کی منظوری دی گئی ہے۔

محکمہ خوراک سے جاری نوٹیفیکیشن کے مطابق اب 20 کلو آٹے کا تھیلا ایک ہزار روپے جبکہ 40 کلو آٹا دو ہزار روپے میں دستیاب ہوگا۔

دوسری جانب بجلی کی قیمتوں میں کمی سے متعلق جاری کیے گئے نوٹیفیکیشن کے مطابق گھریلو استعمال کے لیے ایک سے 100 یونٹ تک بجلی کی قیمت 3 روپے، 100 سے 300 یونٹ تک بجلی کی قیمت پانچ روپے، اور 300 سے زیادہ یونٹس کے استعمال پر چھ روپے یونٹ وصولی کی جائے گی۔

اس کے علاوہ کمرشل استعمال کے لیے بجلی کے 300 یونٹ استعمال کرنے پر 10 روپے فی یونٹ ادائیگی کرنا ہوگی۔ جبکہ 300 سے زیادہ یونٹس کے استعمال پر فی یونٹ بجلی کی قیمت 15 روپے ہو گی۔

ادھر ایکشن کمیٹی کے مطالبات منظور ہونے کے بعد آزاد کشمیر میں امن و امان کی صورتحال کے پیش نظر بند کی گئی انٹرنیٹ سروس بھی بحال کر دی گئی ہے۔

وزیراعظم آزادکشمیر چوہدری انوارالحق نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہاکہ سستی روٹی اور سستی بجلی سے کوئی انکار نہیں کرسکتا، عوام کی پرامن جدوجہد روکنے کا ارادہ پہلے تھا نہ اب ہے۔

انہوں نے کہاکہ آزادکشمیر کے عوام کے مطالبات پورے کرنے کے لیے وفاقی حکومت نے خطیر رقم فراہم کی، کشمیری عوام کے لیے یہ ریلیف عارضی نہیں بلکہ مستقل ہے۔

چوہدری انوارالحق نے کہاکہ اس بات اتفاق کر لیا ہے کہ اپنے اخراجات میں کمی لائیں گے، آٹے اور بجلی کی قیمتوں میں کمی کے حوالے سے جاری کیے گئے نوٹیفکیشنز کے بارے میں ایکشن کمیٹی کے رہنماؤں کو بتا دیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ جموں و کشمیر جوائنٹ عوامی ایکشن کمیٹی کے زیراہتمام 10 مئی سے آزادکشمیر بھر میں شٹر ڈاؤن اور پہیہ جام ہڑتال جاری تھی، اس دوران ہفتہ کے روز اسلام گڑھ میں مظاہرین کی گولی لگنے سے ایک سب انسپکٹر بھی شہید ہوا۔

گزشتہ روز راولاکوٹ کے مقام پر حکومتی کمیٹی اور ایکشن کمیٹی کے رہنماؤں کے درمیان مذاکرات ہوئے جو ناکام ہوگئے تھے، جس کے بعد وزیر اعظم پاکستان شہباز شریف نے آج ہنگامی اجلاس طلب کرتے ہوئے آزاد کشمیر کی صورتحال پر بریفنگ لی اور فوری طور پر 23 ارب روپے جاری کرنے کی منظوری دی جس کے بعد حکومت آزاد کشمیر نے بجلی اور آٹے کی قیمتوں میں کمی کا نوٹیفیکیشن جاری کردیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں