.

کھانے کی 6 چیزیں فریزر سے دور رکھیں!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عموما لوگ کھانے پینے کی ہرچیز کو فریج یا ڈیپ فریرزمیں زیادہ وقت تک محفوظ رکھنے کے خیال سے ڈال دیتے ہیں مگر بعض ماکولات ومشروبات کو فریزر میں رکھنا نقصان دہ بلکہ خطرناک بھی ہو سکتا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ نے قارئین کی دلچسپی اور رہ نمائی کے لیے ایسی چند چیزوں کی تفصیل بیان کی ہے جنہیں فریج میں رکھنا بے مقصد ہی نہیں بلکہ مضربھی ہے۔ اس لیے ان چیزوں کو فریج میں رکھنے سے گریز ہی بہتر ہے۔

ٹماٹر:۔

ٹماٹر ہرقسم کے سالن کا حصہ اور سلاد کا حصہ ہے مگر عموما انہیں فریج میں ڈال کرہم انہیں اپنے لیے مضر صحت بنا دیتے ہیں۔ فریج میں رکھنے سے نہ صرف ٹماٹر کی سرخ رنگت پر منفی اثرات مرتب ہوتے ہیں بلکہ ٹماٹر کے طبعی خواص بھی متاثر ہوتےہیں۔

آلو:۔

کم درجہ حرارت آلو کے لیے بھی نقصان دہ ہے۔ فریج میں رکھنے سے آلو جم جاتے ہیں جس سے ان کی افادیت متاثر ہوتی ہے۔

کافی:۔

کافی کی اپنی ایک خاص خوشبو ہوتی ہے۔ اگر اسے فریج میں رکھا جائے تو وہاں موجود دوسری تمام اشیاء کی بُو کافی میں شامل ہوجائے گی۔ اس لیے ماہرین کافی کو فریج میں رکھنے سے سختی سے منع کرتے ہیں۔ البتہ اگرآپ فریج کے اندرکی ناپسندیدہ بو ختم کرنا چاہتے ہیں تو اس مقصد کے لیے کافی فریج میں رکھی جاسکتی ہے۔

روٹی:۔

بعض لوگ پکی پکائی روٹی بھی فریج میں محفوظ کرتے ہیں مگرروٹی فریج میں رکھنے سے زیادہ سخت ہوجاتی ہے۔

تربوز:۔

تربوز کو ٹھنڈا کرنےکی غرض سے اسے فریج میں ڈالا جاتا ہے مگر یاد رکھیے کہ ایسا کرنے سے تربوز میں موجود مضرصحت اجزاء کے اخراج ممکن نہیں رہتا جس کے نتیجے میں تربوز مضر صحت ہوسکتا ہے۔

شہد:۔

شہد کو حفاظت کی غرض سے فریج میں رکھنے والے یاد رکھیں کہ ایسا کرنے سے اس کی رنگ اڑنے اور استعمال میں سخت ہونے کا اندیشہ ہے۔

لہسن:۔

لہسن فریج میں رکھنے سے اس لیے گریز کیا جائے کیونکہ اس کے نتیجے میں فریج میں بدبو پھیل جاتی ہے جو فریج میں موجود دوسری اشیاء پر اثرانداز ہوتی ہے۔