.

یمن میں سرکاری فوج کے ہاتھوں حوثی قیادت کا بڑے پیمانے پر صفایا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

'العربیہ' ذرائع کا کہنا ہے کہ یمن کی سرکاری فوج اور باغی ملیشیاؤں کے درمیان تعز گورنری کے علاقے ذباب میں ہونے والی ایک جھڑپ میں حوثی رہنما عبدالکریم نجم الدین ہلاک ہو گیا۔

ادھر الجوف گورنری کی المتون ڈائریکٹری میں اتحادی لڑاکا طیاروں کی بمباری کے نتیجے میں حوثی باغیوں کے ایک فیلڈ کمانڈر ماجد یحیی المدانی اپنے متعدد ساتھیوں سمیت مارے جانے کی اطلاعات ہیں۔

صعدہ گورنری کے مشرقی محاذ البقع میں سرکاری فوج اور عوامی مزاحمتی گروپوں سے جھڑپوں میں حوثی ملیشیا اور معزول صدر علی عبداللہ صالح کے وفادار فوجیوں کے مارے جانے کی اطلاعات ہیں۔

یمن کے فورتھ ڈویژن کے کمانڈر کے مطابق سرکاری فوج نے تعز کے جنوبی مغربی العمری کیمپ کو آزاد کرا لیا اور اب شمال کی جانب پیش قدمی جاری رکھے ہوئے ہیں۔ پیش قدمی کرنے والی سرکاری فوج کو عرب اتحاد کے لڑاکا طیاروں کا کور حاصل ہے۔

آَئینی حکومت کا تختہ الٹنے والے باغیوں کو پے در پے شکست کا سامنا ہے۔ فورتھ ڈویژن کے کمانڈر کا مزید کہنا تھا کہ ان کا فوجی آپریشن مغربی ساحل کو انقلابی ملیشیا سے مکمل آزاد کرانے تک جاری رہے گا۔