روس اور یوکرین

روس کا یوکرینی فوج کے ایندھن کے اڈے کو تباہ کرنے کا دعویٰ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

یوکرین میں روسی فوجی آپریشن کے تسلسل میں روسی وزارت دفاع نے اتوار کے روز مغربی یوکرین کے شہر لووف کے قریب طویل فاصلے تک مار کرنے والے ہوائی ہتھیاروں کے ذریعے یوکرینی فوج کے ایندھن کے ایک اڈے کو تباہ کرنے کا اعلان کیا۔

روسی دفاعی ترجمان ایگور کوناشینکوف نے اتوار کو ایک نیوز بریفنگ میں بتایا کہ پروں والے میزائلوں کے ذریعے ہم نے ایک فیکٹری کو نشانہ بنایا جو ٹور اور S-125 طیارہ شکن نظام، یوکرینی فضائیہ کے ریڈار سٹیشنز، الیکٹرانک جنگی آلات اور ٹینکوں کو نشانہ بنانے والے آلات کی دیکھ بھال کرتی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہم نے ملک کے مغرب میں یوکرینی فوج کے گوداموں پر بمباری کی۔ جنگی طیاروں نے گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران یوکرین کی 67 فوجی تنصیبات کو نشانہ بنایا۔

ترجمان نے بتایا کہ S-300 اور بک اینٹی ایئر کرافٹ سسٹم کے میزائل ڈپو کو بھی کیف کے قریب پلیسیٹسکوئے قصبے میں تباہ کر دیا گیا جس میں بحری اڈوں سے زیادہ درستگی کے طویل فاصلے تک مار کرنے والے ہتھیاروں کا استعمال کیا گیا۔

گذشتہ روز روسی فضائی حملوں میں یوکرین میں 67 فوجی تنصیبات کو نشانہ بنایا گیا، جن میں دو کمانڈ سینٹرز، ہتھیاروں اور گولہ بارود کے تین فیلڈ ڈپو، یوکرینی یونٹس کے 11 قلعہ بند مقامات اور فوجی سازوسامان کے 20 مقامات شامل ہیں۔

روسی وزارت دفاع کے مطابق آپریشن کے آغاز سے لے کر اب تک تباہ شدہ یوکرینی اہداف میں 289 ڈرونز، 1656 بکتر بند ٹینک، 169 راکٹ لانچرز، 684 فیلڈ آرٹلری اور مارٹر اور 1503 خصوصی فوجی گاڑیاں ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں