.

ڈی میستورا نے شامی اپوزیشن کو دی گئی تنبیہ واپس لے لی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام کے لیے اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی اسٹیفن ڈی میستورا آئندہ چند روز کے دوران "جنیوا 4 " امن بات چیت میں شرکت کے لیے متعلقہ فریقوں کو دعوت دیں گے۔ ڈی میستورا نے شامی اپوزیشن کو کی جانے والی اپنی تنبیہہ بھی واپس لے لی ہے۔ یہ بات اقوام متحدہ کے ترجمان اسٹیفن ڈوجارک نے بدھ کی شام بتائی۔

اس سے قبل ڈی میستورا نے شامی اپوزیشن کو خبردار کیا تھا کہ اگر اپوزیشن کی جانب سے اپنی نمائندگی کے لیے اتفاق رائے نہ ہوا تو ڈی میستورا اقوام متحدہ کے زیر نگرانی 20 فروری کو جنیوا میں مقررہ امن بات چیت کے اگلے دور میں شرکت کے لیے خود اپوزیشن کے مندوبین کا چناؤ کر لیں گے۔

ڈی میستورا نے اپوزیشن کے نمائندوں پر اتفاق رائے کے لیے آٹھ فروری کی تاریخ مقرر کی تھی۔

اقوام متحدہ کے ترجمان ڈوجارک نے صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ " ہم سب جانتے ہیں کہ یہ اقدامات پیچیدہ نوعیت کے ہیں جن میں بہت سے لوگوں کے ساتھ بہت سی بات چیت اور مشاورت کرنا پڑتی ہے۔ ڈی میستورا اور ان کی ٹیم اس حوالے سے کام جاری رکھیں گے"۔

شامی اپوزیشن نے ڈی میستورا کی دھمکی پر سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے باور کرایا تھا کہ اپوزیشن نمائندوں کے چناؤ سے خصوصی ایلچی کا کوئی تعلق نہیں۔