عراقی سکیورٹی فورسز نے مظاہرین کے خلاف مہلک طاقت کا استعمال کیا : ہیومن رائٹس واچ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

انسانی حقوق کی بین الاقوامی تنظیم ہیومن رائٹس واچ کا کہنا ہے کہ عراقی سکیورٹی فورسز نے رواں ماہ بصرہ صوبے میں احتجاجی مظاہروں کے دوران احتجاج کرنے والوں پر فائرنگ کی اور مظاہرین کو زدوکوب کیا۔

تنظیم نے اپنی رپورٹ میں تصدیق کی ہے کہ وزارت داخلہ کی فورسز نے احتجاج کرنے والوں کے خلاف بڑی اور غیر ضروری حد تک مہلک طاقت کا استعمال کیا۔

رپورٹ کے مطابق مظاہروں کے دوران 3 افراد ہلاک اور کم از کم 47 زخمی ہو گئے۔ ان میں دو بچوں پر فائرنگ کی گئی اور ایک بچّے کو بندوق کا بٹ مارا گیا۔

ہیومن رائٹس واچ نے باور کرایا کہ سکیورٹی فورسز نے براہ راست گولہ بارود استعمال کرنے کے علاوہ پتھراؤ بھی کیا اور کم از کم 47 افراد کو بری طرح پیٹا جن میں 29 کو گرفتاری کے دوران یا اس کے بعد زدوکوب کیا گیا۔ اس دوران مظاہرین نے سکیورٹی فورسز پر پتھراؤ کرنے کے علاوہ اُن پر پٹرول بم اور جلتے ہوئے ٹائر پھینکے۔

مقبول خبریں اہم خبریں