سعودی یونیورسٹی کے امتحانی سسٹم ہیک کرنے والا ملزم گرفتار، طلبہ وطالبات کے نتائج تبدیل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

شاہ فیصل ای یونیورسٹی کے سسٹم کو ہیک کرنے والا گرفتار کرکے عدالت کے حوالے کر دیا گیا۔ ہیکر نے یونیورسٹی کا سسٹم ہیک کرکے طلباء کے رزلٹ میں رد وبدل کی کی تھی۔ ملزم نے بعض نجی الیکٹرانک معلومات سے فائدہ اٹھا کر سسٹم ہیک کیا تھا۔

سعودی محکمہ استغاثہ کے ترجمان ڈاکٹر ماجد الدسیمانی نے بتایا کہ ہمارے ادارے کے متعلقہ اہلکاروں نے تحقیقات کر کے اس بات کی تصدیق کرلی تھی کہ انفارمیشن کرائمز کے ایک دلدادہ نے ای یونیورسٹی کے سسٹم کو ہیک کیا۔ یونیورسٹی سے متعلق معلومات دیکھیں۔ طلباء کے رزلٹ تک رسائی حاصل کی اور اس میں رد وبدل کیا۔

الدسیمانی نے بتایا کہ پبلک پراسیکیوشن نے تجزیہ کرکے اس بات کا پتہ لگا لیا ہے کہ ہیکر نے ہیکنگ کے لیے کس طرز کا مجرمانہ طریقہ کار اختیار کیا۔ ہمارے ماہرین ہیکنگ میں ملوث افراد کا پتہ لگانے کے لیے فوجداری سراغرسانی کے سائنٹفک طور طریقوں سے کام لے رہے ہیں۔

الدسیمانی نے توجہ دلائی ہے کہ سعودی ای یونیورسٹی کے سسٹم کی ہیکنگ میں استعمال ہونے والے تمام آلات کو تحویل میں لے لیا گیا ہے۔ ہیکر کو خصوصی عدالت کے حوالے کردیا گیا۔ عدالت سے استدعا کی گئی ہے کہ وہ اینٹی انفارمیشن کرائم قانون کی روشنی میں ملزم کو قرار واقعی عبرتناک سزا دے۔

کنگ فیصل یونیورسٹی نے بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب اعلامیہ جاری کرکے اطلاع دی تھی کہ ہیکر نے یونیورسٹی کے رزلٹ سسٹم کو ہیک کرکے 19 طلباء و طالبات کا نتیجہ تبدیل کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں