الاقصی مسجد کے قریب کانسٹیبل سے بندوق چھیننے والے شخص کو گولی مار دی گئی: پولیس

مسجد اقصیٰ کے کمپاؤنڈ میں رونما ہونے والا واقعہ اس وقت پیش آیا جب رمضان المبارک کے دوران مسجد میں نمازیوں کی تعداد میں غیر معمولی اضافہ ہوتا ہے۔

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

مسجد اقصیٰ کے کمپاؤنڈ سے اسرائیلی پولیس کے ہاتھوں گرفتار ہونے والے ایک شخص نے حراست میں لینے والے پولیس افسر سے ہی بندوق چھین کر گولی چلا دی، جس کے بعد وہاں تعینات پولیس یونٹ نے فائر کرنے والے شخص کو گولی مار کر ہلاک کر دیا۔ پولیس نے نے واقعے کو دہشت گرد کارروائی بتایا ہے۔

مسلمانوں کے تیسرے مقدس ترین مقام مسجد اقصیٰ کے کمپاؤنڈ میں رونما ہونے والا واقعہ اس وقت پیش آیا جب رمضان المبارک کے دوران مسجد میں نمازیوں کی تعداد میں غیر معمولی اضافہ ہوتا ہے۔

پولیس بیان میں بتایا گیا ہے کہ اہلکار کی فائرنگ سے جاں بحق ہونے والا محمد خالد العصيبی جنوبی اسرائیل کی حورہ میونسپلٹی کا ایک 26 سالہ رہائشی تھا۔

واقعے کی خبر نشر کرنے والی برطانوی خبر رساں ایجنسی ’رائیٹرز‘ نے بتایا کہ وہ پولیس دعوے سے متعلق تفصیلات کی آزادانہ تصدیق نہیں کر سکے۔

مقبوضہ مغربی کنارے اور غرب اردن کے علاقوں میں کئی مہینوں سے جاری پرتشدد کارروائیوں کے باعث اسرائیل اور فلسطین کے درمیان کشیدگی کی آگ سلگ رہی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں